The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نےاسحاق ڈارکی سینیٹ رکنیت معطل کردی

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے اسحاق ڈارکی سینیٹ رکنیت عبوری طور پر معطل کردی، چیف جسٹس نے کہا کہ اسحاق ڈار کو ایک نہ ایک دن آنا ہی پڑے گا، بتادیں اسحاق ڈارکب تک صحتیاب ہوکرپیش ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے سینیٹ الیکشن کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی ، عدالت نے آج اسحاق ڈار کو ذاتی حیثیت میں طلب کر رکھا تھا تاہم وہ پیش نہیں ہوئے۔

چیف جسٹس نے پوچھا کہ آج اسحاق ڈار پیش ہوئے یا نہیں ، جس پر اسحاق ڈار کے وکیل کی جانب سے میڈیکل سرٹیفکیٹ پیش کیا گیا، جس پر چیف جسٹس نے کہا عدالت میں پیش ہونے کی باری ہوتومیڈیکل رپورٹ آجاتی ہے۔

جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ اسحاق ڈار کو ایک نہ ایک دن تو آنا پڑے گا، بتادیں اسحاق ڈار کب تک صحت یاب ہوکر پیش ہوں گے، وکیل نے بتایا کہ یہ ڈاکٹرہی بتا سکتے ہیں اسحاق ڈارکب تک صحت یاب ہوں گے۔

جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ توہم یہ کیس عید کے بعد تک ملتوی کردیتےہیں، اسحاق ڈارجب صحتیاب ہوجائیں توعدالت آجائیں۔

عدالت نے عدم پیشی پر سابق وزیر خزانہ کا میڈیکل سرٹیفکیٹ مسترد کرتے ہوئے ان کی سینیٹ رکنیت عبوری طور پر معطل کردی اور کیس کی مزید سماعت عید کے بعد تک ملتوی کردی۔

یاد سپریم کورٹ میں پیپلز پارٹی کے اُمیدوار نوازش پیرزادہ نے اسحاق ڈار کے خلاف درخواست دائر کی تھی ، جس میں موقف اختیار کیا تھا کہ اسحاق ڈار احتساب عدالت سے مفرور ہیں اور قانون کے تحت مفرور ملزم کے کوئی بنیادی حقوق نہیں ہوتے جب کہ لاہور ہائی کورٹ نے اسحاق ڈار کے کاغذات نامزدگی پر اعتراض ختم کر دیے، ہائی کورٹ کا فیصلہ حقائق کے منافی ہے لہذا اس فیصلے کو کالعدم کیا جائے۔

خیال رہے کہ اسحاق ڈار نے ن لیگ کے ٹکٹ پرغیرموجودگی میں پنجاب سے سینیٹ کی جنرل اور ٹیکنو کریٹ نشست پر الگ الگ کاغذات نامزدگی جمع کرائے تھے تاہم 12 فروری کوالیکشن کمیشن نے سینیٹ انتخابات کے لیے اسحاق ڈار کے کاغذات نامزدگی مسترد کردیے تھے۔

جس کے بعد لاہور ہائی کورٹ نے سابق وزیرخزانہ اسحاق ڈار کو سینیٹ الیکشن لڑنے کی اجازت دیتے ہوئے ریٹرننگ افسر کا اسحاق ڈار کے خلاف دیا گیا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا تھا۔

واضح رہے کہ آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس میں احتساب عدالت کی جانب سے اسحاق ڈار کو اشتہاری قرار دیا جا چکا ہے۔

نیب نے اسحاق ڈار کو وطن واپس لانے کیلئے آخری حد تک جانے کا فیصلہ کرلیا اور ریڈ وارنٹ جاری کرانے کی کارروائی شروع کردی گئی ہے، اسحاق ڈار کی واپسی کیلئے وزارت داخلہ سے ریڈ وارنٹ کی استدعا کی جائے گی اور اسحاق ڈارکیخلاف ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری سے انٹرپول کو آگاہ کیا جائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں