The news is by your side.

Advertisement

بیوی کو میکے سے لانے کے لیے شوہر سپریم کورٹ پہنچ گیا، ججز کے مفید مشورے

اسلام آباد : سپریم کورٹ میں بیوی کے میکے سے واپس نہ آنے سے متعلق کیس میں جسٹس مشیر عالم نے کہا بیوی تو چاہتی ہے شادی قائم رہے ، بیوی کو خرچہ دے کر اپنی طرف مائل کریں ، بیوی کو بھی پتا چلے کہ شوہر پیار کرتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں بیوی کے میکے سے واپس نہ آنے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی ، وکیل نے کہا مؤکل نے بیوی کو طلاق نہیں دی لیکن وہ ساتھ رہنا نہیں چاہتی۔

جس پر جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے وکیل سے استفسار کیا کیا وہ طلاق لینا چاہتی ہے، بیوی تو چاہتی ہے شادی قائم رہے، بیوی نان نفقہ مانگ رہی ہے، چاند ستارے نہیں چاہییں ، عیدپرہی کپڑے بھیج دیا کریں کچھ توایسا کریں۔

جسٹس مشیر عالم نے ریمارکس میں کہا عدالتوں میں ایسے معاملات حل نہیں ہوتے ، بیوی کو خرچہ دے کر اپنی طرف مائل کریں، پیار محبت سے بیوی کو کوئی چیز تو بھیجیں، بیوی کو بھی پتا چلے کہ شوہر پیار کرتا ہے۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے وکیل سے استفسار کیا آپ شادی شدہ ہیں، تو وکیل نے جواب دیا کہ میں شادی شدہ ہوں تو جسٹس مشیر عالم کا کہنا تھا کہ عمر درازکوبھی سکھائیں بیوی کوخوش کیسے رکھا جاتا ہے۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے کہا آپ اپنا کیس واپس لے لیں، درخواست گزار بھی بیوی کے ساتھ رہنا چاہتا ہے اور بیوی اور بچوں سے پیار کرتا ہے۔

عدالت نے کہا درخواست گزار کے وکیل نے حل کی یقین دہانی کرائی ہے، جس کے بعد درخواست واپس لینے کی بنیاد پر معاملہ نمٹا دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں