The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نے راوی اربن ڈیولپمنٹ اتھارٹی کی بحالی کا عبوری حکم واپس لے لیا

اسلام آباد : سپریم کورٹ نےراوی اربن ڈیولپمنٹ اتھارٹی کی بحالی کاعبوری حکم واپس لے لیا اور کہا ہائیکورٹ کا حتمی فیصلہ آنے کے بعد عبوری حکم کیخلاف اپیلیں غیرموثر ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے راوی اربن ڈیولپمنٹ اتھارٹی کی بحالی کا عبوری حکم واپس لیتے ہوئے لاہور ہائی کورٹ کے عبوری حکم کیخلاف پنجاب حکومت کی اپیلیں نمٹا دیں۔

عدالت نے کہا راوی اربن منصوبہ کیس میں ہائی کورٹ کا حتمی فیصلہ آچکا ہے، پنجاب حکومت چاہے تو ہائی کورٹ کا فیصلہ چیلنج کرسکتی ہے۔

سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ عبوری حکم قانون کے تحت حتمی فیصلےمیں ضم ہوچکاہے، حتمی فیصلہ آنے کے بعد عبوری حکم کیخلاف اپیلیں غیر موثر ہیں۔

وکیل روڈا نے کہا 2 ہفتے کا وقت دیں ہائیکورٹ احکامات کا جائزہ لینا چاہتے ہیں ، جس پر جسٹس اعجازالاحسن کا کہنا تھا کہ ہائیکورٹ کا فیصلہ آچکا ہے اپیلوں کو لٹکانے کا کوئی فائدہ نہیں، کوئی قانونی نقاط اٹھانا چاہتے ہیں توفیصلے کیخلاف اپیل میں اٹھا دیں۔

خیال رہے پنجاب حکومت نے روڈا کو کام سے روکنے کا لاہور ہائیکورٹ کا عبوری حکم چیلنج کیا تھا۔

یاد رہے گذشتہ روز لاہور ہائی کورٹ نے راوی اربن پراجیکٹ کے لئے سیکشن چار کے تحت زمین کا حصول غیرقانونی قرار دیتے ہوئے کہا تھا ماسٹر پلان کے بغیربنائی گئی اسکیمیں غیرقانونی ہیں۔

فیصلے میں کہا گیا تھا کہ ترمیمی آرڈیننس آئین کے آرٹیکل 120 کے خلاف ہے، راوی پراجیکٹ میں ماحولیاتی قوانین کو نظرانداز کیا گیا اور پراجیکٹ کےلئے قرضے غیرقانونی طریقہ سے حاصل کئے گئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں