اسکردو: پی آئی اے کی پرواز میں تاخیر، مسافر سراپا احتجاج، عدالت کا نوٹس -
The news is by your side.

Advertisement

اسکردو: پی آئی اے کی پرواز میں تاخیر، مسافر سراپا احتجاج، عدالت کا نوٹس

کراچی : پی آئی اے کی اسکردو میں ائیر سفاری کی پرواز میں تاخیر کا معاملہ معمہ بن گیا، مشتعل مسافروں نے ڈی جی سی اے اے کو کھری کھری سنا دیں، سپریم کورٹ نے سی ای او کو طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق باکمال لوگوں کی لاجواب سروس کے دعویداروں کا ایک کارنامہ سامنے آگیا، پی آئی اے کو نانگا پربت کی پرواز مہنگی پڑ گئی، اسکردو ایئرپورٹ پر پی آئی اے نے پرواز کی تاخیر کو موسم کی خرابی قرار دیا، وی آئی پی فلائٹ کو موسم کی خرابی بنا کر مسافروں کو گھنٹوں انتظار کروایا گیا، مذکورہ پرواز میں ڈی جی سول ایوی ایشن حسن بیگ بھی موجود تھے۔

اس موقع پر خواتین مسافروں نے ڈی جی سی اے اے کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا، ڈی جی سی اے اے نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے انکوائری کا حکم دے دیا، ان کا کہنا تھا کہ تاخیر کی ذمہ دار پی آئی اے انتظامیہ ہے، میں تو خود ایک مہمان کی حیثیت سے یہاں موجود ہوں۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ پی آئی اے کی جانب سے سیاحت کے فروغ کیلئے وی آئی پی ائیر سفاری کا آغاز کیا گیاہے جس کی افتتاحی پرواز کیلئے ڈی جی سی اے اے کو مدعو کیا گیا تھا، فلائٹ لیٹ ہونے کا معاملہ مبینہ طور پر ان کے دوست کی آمد میں تاخیر تھا۔

اس حوالے سے ڈی جی سی اے اے کا مؤقف تھا کہ ائیر سفاری جانے والی فلائٹ میں میرا کوئی دوست نہیں تھا، مجھے تو خود پی آئی اے سی ای او نے دعوت دی تھی  البتہ انکوائری لیٹر بھیج دیا ہے، حسن بیگ نے کہا کہ ایئرسفاری کامیاب کرنے کیلیے مجھے بلایا گیا تھا اور دیگر مہمانوں کو بھی، اگر کوئی رکاوٹ پیدا ہوئی یا فلائٹ لیٹ ہوئی تو یہ پی آئی اے کی ذمے داری ہے۔

احتجاجی مسافروں سے گفتگو میں ڈی جی کا کہنا تھا کہ میں نے سی او او پی آئی اے کو اس سلسلے میں لیٹر بھی لکھ دیا ہے، ذمے داروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی،  ایئرلائنز کو ریگولیٹ اور مسافروں کے حقوق کا تحفظ ہماری ذمے داری ہے۔

میں ذاتی طور پر کسی چیز کا ذمے دار نہیں تھا،صرف اس موقع پر موجود تھا، میں چائے نہیں پیوں گا اور آپ کے ساتھ احتجاج میں شامل ہوں گا،۔

دوسری جانب ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ تاخیر سے متعلق آگاہ کردیا گیا تھا، مسافروں تک پیغام کیوں نہیں پہنچا اس کی انکوائری کررہے ہیں۔

علاوہ ازیں سپریم کورٹ نے اسکردو ایئر پورٹ پر فلائٹ میں تاخیر کا نوٹس لے لیا ہے، سپریم کورٹ نے پی آئی اے کے طیارے کے ذاتی استعمال اور قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کا نوٹس لیتے ہوئے سیکیرٹری ایوی ایوی ایشن اور سی ای او پی آئی اے مشرف رسول سیاں کو طلب کرلیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں