The news is by your side.

بچوں‌ کا اسکرین ٹائم کتنا رکھا جائے؟

الہ آباد: بھارت میں ہونے والی ایک تحقیق میں ماہرین نے والدین کو تجویز دی ہے کہ بچوں کے اسکرین ٹائم کو دن میں 2 گھنٹے تک محدود کریں۔

تفصیلات کے مطابق بین الاقوامی جریدے ’بلیٹن آف سائنس، ٹیکنالوجی اینڈ سوسائٹی‘ میں شائع شدہ ایک تحقیق میں ماہرین نے تجویز کیا ہے کہ بچوں کے لیے اسکرین ٹائم روزانہ دو گھنٹے سے کم کیا جانا چاہیے۔

یہ تحقیق الہ آباد یونیورسٹی کے شعبہ بشریات کے ایک ریسرچ اسکالر مادھوی ترپاٹھی نے کی، اس تحقیق میں ٹی وی، لیپ ٹاپ اور اسمارٹ فون جیسے ڈیجیٹل آلات کے حوالے سے والدین کی نگرانی اور پالیسی سازی کی اہمیت کو مزید واضح کیا گیا۔

شائع شدہ مقالے میں کہا گیا کہ الہ آباد ریاست اترپردیش میں سب سے زیادہ آبادی والا شہر ہے، اس لیے دو مراحل کے بے ترتیب نمونے لینے کا طریقہ استعمال کرتے ہوئے شہر کے 400 بچوں پر ایک کراس سیکشنل تحقیق کی گئی۔

پہلے مرحلے میں الہ آباد شہر کے 10 میونسپل وارڈوں کا انتخاب کیا گیا، جن کی کل آبادی 11 ہزار سے 22 ہزار کے درمیان ہے، جب کہ دوسرے مرحلے میں ہر منتخب وارڈ سے بچوں کو ان کی آبادی کے تناسب سے منتخب کیا گیا، تاکہ نمونے کا سائز حاصل کیا جا سکے۔

اسکالر ترپاٹھی نے کہا ’نتائج سے پتا چلتا ہے کہ زیادہ تر گھروں میں ٹیلی وژن کے بعد ڈیجیٹل کیمرے، لیپ ٹاپ، ٹیبلٹ، کنڈل اور ویڈیو گیمز موجود ہیں، جس کی وجہ سے بچے زیادہ تر وقت اسکرین پر گزارتے ہیں۔‘

انھوں نے کہا کہ اسکرین پر زیادہ وقت گزارنے سے نہ صرف بچوں کو جسمانی طور پر متاثر کرتا ہے اور ان کی بینائی کو نقصان پہنچاتا ہے، بلکہ ان کی ذہنی صحت پر بھی منفی اثر پڑتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں