سنٹرل جیل کراچی میں پولیس اور رینجرزکا سرچ آپریشن شروع -
The news is by your side.

Advertisement

سنٹرل جیل کراچی میں پولیس اور رینجرزکا سرچ آپریشن شروع

کراچی: سینٹرل جیل میں رینجرز اور پولیس کی بھاری نفری سر چ آپریشن کے لیے پہنچ گئی ہے ، جیل کی آج مکمل طور پر تلاشی لی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں نے سنٹرل جیل کراچی کی مکمل تلاشی لینے کا فیصلہ کیا ہے ، جس کے لیے پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری نے آپریشن کا آغاز کردیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سرچ آپریشن جیل میں قید مجرموں کے پاس ممنوعہ اشیا کی موجودگی کی اطلاع پر کیا جارہا ہے ، ان ممنوعہ اشیا میں موبائل فون، منشیات اور اسلحہ بھی شامل ہے۔

گزشتہ رات قانون نافذ کرنے والے اداروں نے جیل سےمتصل غوثیہ کالونی میں سرچ آپریشن کیا تھا۔ اس آپریشن کےدوران 75 سےزائد گھروں کی تلاشی لی گئی جبکہ 100 سےزائدافرادکےکوائف چیک کیےگئے تھے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جن افراد کے کوائف کی جانچ پڑتال کی گئی تھی ان میں سے کچھ افراد کےکوائف کی تصدیق نہ ہوسکی تھی ، جس پر تحقیقات جاری ہیں، تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکا ہے کہ آیا ان افراد کو حراست میں لیا گیا ہے یا نہیں۔

یاد رہے کہ کراچی کی سنٹرل جیل کا شمار پاکستان کی بڑی جیلوں میں ہوتا ہے جس میں 6000 قیدی بند ہیں۔ ان میں سے کچھ دہشت گردی کے سنگین ترین واقعات میں ملوث سزا یافتہ افراد بھی ہیں جیسے کہ سابق صدر پرویز مشرف پر قاتلانہ حملے میں ملوث افراد بھی یہی قید ہیں۔

گزشتہ سال جون میں بھی اسی نوعیت کا سرچ آپریشن سنٹرل جیل کراچی میں کیا گیا تھا، 12 گھنٹے جاری رہنے والے اس آپریشن میں بھاری مقدار میں منشیات کے ساتھ ساتھ جیل کی بیرکوں سے لیپ ٹاپ اور موبائل فون بھی برآمد کیے گئے تھے ۔ جیل میں موبائل سگنلز کی روک تھام کے لیے جیمر لگے ہوئے ہیں تاہم کچھ مجرموں کے پاس سے ایسی ڈیوائسز بھی برآمد ہوئیں جو کہ جیمر کو ناکارہ کردیتی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں