The news is by your side.

Advertisement

غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث کمپنیوں کے خلاف سخت کارروائی کا آغاز

اسلام آباد : ایس ای سی پی نے غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث کمپنیوں کے خلاف سخت کارروائی کا آغاز کردیا، عوام کو متنبہ کیا گیا ہے کہ کمپنیوں کی گمراہ کن اسکیموں میں اپنا قیمتی سرمایہ ضائع نہ کریں۔

تفصیلات کے مطابق سکیورٹیز اینڈ ایکس چینج کمیشن ( ایس ای سی پی ) نے کرپٹو کرنسی کے لین دین، ملٹی لیول مارکیٹنگ، پیرامڈ سکیموں اور دیگر غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث نو کمپنیوں کے خلاف سخت کارروائی کا آغاز کر دیا ہے جس میں انہیں بند کرنا بھی شامل ہے۔

ایس ای سی پی کی جانب سے عوام کو انتباہ کیا گیا ہے کہ وہ ان کمپنیوں کی گمراہ کن سرمایہ کاری اسکیموں، منصوبوں اور مصنوعات وغیرہ میں اپنا قیمتی سرمایہ ضائع نہ کریں۔

جن کمپنیوں کیخلاف کارروائیاں کی گئی ہیں ان میں گولڈ ٹراینسمٹ نیٹ ورک ٹیکنالوجی پرائیویٹ لمیٹڈ ، گرین ایپل سپر مارکیٹ پرائیویٹ لمیٹڈ، گلیگسی ٹائپنگ جابز ( سنگل ممبر کمپنی) پرائیوٹ لیمیٹڈ، تھری اے الائنس پرائیویٹ لمیٹڈ، پاک میمن امپکس پرائیویٹ لمیٹڈ، میمن کارپوریشن پرائیویٹ لمیٹڈ، ہیومینی ٹس میری ٹس ( سنگل ممبر کمپنی) پرائیویٹ لمیٹڈ، آئی ڈی جی انٹر پرائزیز پرائیویٹ لمیٹڈ اور آیت انٹر پرائیزیز ( سنگل ممبر کمپنی) پرائیویٹ شامل ہیں۔

ایس ای سی پی نے ان کمپنیوں کے خلاف کمپنیز ایکٹ 2017 کی سیکشن 301 اور سیکشن 304 کے تحت کمپنیوں کو بند کرنے کی قانونی کارروائی کا آغاز کر دیا ہے۔

ایس ای سی پی کے مشاہدہ میں آیا کہ یہ کمپنیاں غیر قانونی اور ممنوع کاروباری سرگرمیوں میں ملوث ہیں اور میمورنڈم آف ایسوسی ایشن میں طے شدہ شرائط کی خلاف ورزی کر رہی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں