راولپنڈی کینٹ کے علاقے ویسٹریج میں غیر قانونی اسکول بند کرنے کا فیصلہ -
The news is by your side.

Advertisement

راولپنڈی کینٹ کے علاقے ویسٹریج میں غیر قانونی اسکول بند کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کے اجلاس میں راولپنڈی کینٹ کے علاقے ویسٹریج میں غیر قانونی اسکول بند کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کا اجلاس سینیٹر صلاح الدین ترمذی کی صدارت میں ہوا۔ اجلاس میں کنٹونمنٹس امور اور لورالائی میں 34 مقامی افراد کو کنٹونمنٹ ایریا سے بے دخل کرنے کے معاملہ پر بحث ہوئی۔

سینیٹر فرحت اللہ بابر نے کہا کہ اسٹیشن کمانڈر کسی کو اس کی ملکیت سے بے دخل نہیں کرسکتا۔ انہوں نے کہا کہ زمینیں دفاعی مقاصد کے لیے دی گئی تھیں مگر وہاں گالف کورس بنا دیے گئے ہیں۔

سینیٹر عطا الرحمٰن نے کنٹونمنٹس کے معاملات پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سارے اداروں کا احتساب ہونا چاہیئے۔ سب عوام کو جوابدہ ہیں۔

سیکریٹری دفاع لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ ضمیر الحسن شاہ نے سخت آرا پر جذباتی ہو کر کہا کہ جو قومیں افواج کوعزت نہیں دیتیں وہ مٹ جاتی ہیں۔ لیز پر بنائے گئے رہائشی مکانات میں غیر قانونی طور پر اسکول قائم ہیں۔

انہوں نے کہا کہ راولپنڈی کینٹ کے علاقے ویسٹریج میں غیر قانونی اسکول بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ویسٹریج میں 32 نجی اسکولوں کو نوٹس جاری کردیے گئے ہیں۔ اگر اسکول جون تک خالی نہ کیے گئے تو سیل کردیے جائیں گے۔

سینیٹر الیاس بلور نے معاملے کو رفع دفع کرنے کے لیے کہا کہ ایک دوسرے پر الزام تراشی کرنے کے بجائے مسائل کا حل تلاش کرنا چاہیئے۔ انہوں ‌نے کہا کہ کسی کو بھی غیر معمولی اختیارات نہیں دیے جا سکتے۔

سینیٹر صلاح الدین ترمذی نے کہا کہ مسئلے کے حل کے لیے سب کمیٹی قائم کردی گئی ہے جو 60 روز میں رپورٹ جمع کروائے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں