امریکا کی کشمیر سے متعلق پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی، سینیٹرجان مکین jhon-mccain
The news is by your side.

Advertisement

امریکا کی کشمیر سے متعلق پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی، سینیٹرجان مکین

اسلام آباد : سینیٹرجان مکین نے کہا ہے کہ امریکا کی کشمیر سے متعلق پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے۔

وہ اسلام آباد میں مشیرخارجہ سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے انہوں نے کہا کہ امریکا کشمیر سے متعلق اپنی پالیسی جاری رکھے گا اور کشمیر کے معاملے پر گہری نگاہ رکھی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکا کشمیرسے پرتشدد واقعات کا خاتمہ چاہتا ہے امریکا مسئلہ کشمیرکا پُرامن اورمذاکرات کے ذریعے حل چاہتا ہے جس کے لیے تمام صلاحیتیں بروئے کار لائے گا۔

سینیٹر جان مکین نے کہا کہ افغانستان میں امن و استحکام کیلئے پاکستان کا کردار اہم ہے اور پاکستان کی مدد کے بغیر افغانستان میں امن و استحکام ممکن نہیں تھا۔

سینیٹرجان مکین نے خطے میں پائیدار امن کے لیے پاکستان کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان نے بڑی قربانیاں دی ہیں جس کا احترام کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ میری کوشش ہو گی کہ ہر سال پاکستان آیا کروں تاکہ روابط مزید مستحکم اور تعلقات پائیدار ہوں تاکہ قیام امن کے لےی مشترکہ کاوشوں کا سلسلہ جاری رہے۔

سینیٹر جان مکین نے کہا کہ پاکستان دہشت گردی کا شکار رہا ہے لیکن یہاں کی بہادر عوام اور سیکویرٹی فورسز اپنی جانوں کے عوض دہشت گردوں کے خلاف لازوال کامیابیاں حاصل کی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں