The news is by your side.

Advertisement

سابق سینیٹر نئیر بخاری نے ضمانت کے لئےعدالت سے رجوع کرلیا

اسلام آباد : سابق سینیٹر نیئر بخاری نے گرفتاری سے بچنے کے لئے ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست ہائی کورٹ میں جمع کرادی ہے، عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 19 مئی تک جواب طلب کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز اسلام آباد کچہری میں تلاشی دینے کے معاملے پر سابق سینٹر اور ان کے بیٹے کی جانب سے پولیس اہلکار سے بدتمیزی کی گئی تھی۔

پولیس اہلکار کی جانب سے اس واقعے کے خلاف تھانے میں‌ مقدمہ درج کرایا گیا تھا. مقدمے کی سماعت سول عدالت جج جواد حسین عادل  کی سربراہی میں ہوئی تھی، ملزمان کی عدم موجودگی پر جج نے گرفتاری کے وارنٹ جاری کرتے ہوئے ملزمان کو عدالت میں پیش کرنے کی ہدایت کی تھی۔

سابق سینٹر نے گرفتاری سے بچنے کے لئے آج ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں ضمانت کے لئے درخواست دائر کرائی گئی.

درخواست کی سماعت جج کامران بشارت کی سربراہی میں کی گئی، جج نے ضمانت منظور کرتے ہوئے پولیس اور سیکریٹری داخلہ سے تفصیلی جواب طلب کر لیا ہے۔

سماعت کے دوران معاملے میں مزید پیش رفت کرتے ہوئے سیشن جج نے معاملہ سماعت کے لئے ایڈیشنل جج راجا آصف محمود کی عدالت میں بھجوادیا اور کیس کی اگلی سماعت 19 مئی تک ملتوی کردی ہے۔

مزید پڑھیں :   سابق چیئرمین سینیٹ نیئر حسین بخاری کے وارنٹ گرفتاری جاری
 واضح رہے گزشتہ روز اسلام آباد کچہری میں داخل ہوتے وقت تلاشی دینے کے معاملے پر تلخ کلامی ہوئی، جس کے بعد سابق سینٹر نے پولیس اہلکار کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں، جبکہ ان بیٹے نے پولیس اہلکار کو تھپڑ مارا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں