طیبہ تشدد کیس: سابق جج اور اہلیہ پر فرد جرم عائد -
The news is by your side.

Advertisement

طیبہ تشدد کیس: سابق جج اور اہلیہ پر فرد جرم عائد

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں کمسن ملازمہ طیبہ پر تشدد کے کیس میں ہائی کورٹ نے سابق جج راجا خرم اور ان کی اہلیہ ماہین پر فرد جرم عائد کردی۔ عدالت نے گواہوں کو شہادت کے لیے 19 مئی کو طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق کمسن گھریلو ملازمہ طیبہ پر تشدد کے جرم میں سابق ایڈیشنل سیشن جج راجا خرم علی اور ان کی اہلیہ ماہین ظفر پر فرد جرم عائد کردی گئی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے ملزمان کے صحت جرم سے انکار پر گواہوں کو 19 مئی کو طلب کرلیا۔

مزید پڑھیں: ملک میں بچوں کے تحفظ کا قانون ہی نہیں، چیف جسٹس

گزشتہ سماعت پر طیبہ کے والد محمد اعظم نے ملزمان سے راضی نامہ ہونے کا بیان ریکارڈ کروایا تھا تاہم عدالت نے والدین اور ملزمان کے درمیان راضی نامے کو مسترد کردیا گیا۔

فرد جرم عائد کرتے ہوئے عدالت نے کہا کہ مختلف دفعات کی بنیاد پر فرد جرم عائد کی جارہی ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں