The news is by your side.

Advertisement

نوشہرہ، 7 سال کی بچی زیادتی کے بعد قتل، 2 ملزم گرفتار

نوشہرہ: خیبرپختونخوا کے علاقے نوشہرہ میں 7 سال کی بچی کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق نوشہرہ کے علاقے کاکا صاحب میں 7 سال کی عوض نور کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا، بچی دو دن پہلے لاپتا ہوئی تھی لاش آج پیر سچ کے علاقے میں کنویں سے ملی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ قتل کے الزام میں 2 ملزمان کو گرفتار کیا ہے، مرکزی ملزم ابدار نے جرم کا اعتراف کیا ہے۔

نوشہرہ پولیس کے مطابق ملزم بچی کے والد کا ملازم تھا، مدرسے جاتے ہوئے بچی کو درندگی کا نشانہ بنایا گیا، لاش پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کردی گئی ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ واقعے کا مقدمہ درج کرکے تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے اور بچی کی پوسٹ مارٹم رپورٹ کی روشنی میں تفتیش کو آگے بڑھائیں گے۔

آئی جی خیبرپختونخوا ثنا اللہ عباسی نے کہا کہ صوبے میں وکٹم سپورٹ پروگرام شروع کررہے ہیں، پروگرام کے لیے پشاور، چارسدہ، مردان اور ایبٹ آباد میں لیڈی پولیس آفیسرز کا انتخاب کیا ہے۔

مزید پڑھیں: گوجرانوالہ میں 8 سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل

واضح رہے کہ گزشتہ سال نومبر میں گوجرانوالہ کی 8 سالہ مریم کو مبینہ زیادتی کے بعد گلا دبا کر قتل کردیا گیا تھا، جس کی لاش تین روز بعد کھیتوں سے برآمد ہوئی تھی۔

بچی کی لاش برآمد ہونے سے قبل پولیس نے شک کی بنیاد پر ہمسائے عبد الغنی کو گرفتار کیا تھا جس نے دوران تفتیش قتل کا اعتراف کیا تھا، ملزم کی نشاندہی پر کمسن مریم کی لاش برآمد کی گئی تھی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں