The news is by your side.

Advertisement

شعبان المعظم کا چاند نظر آگیا

شب برات 20 اپریل کو ہوگی

کراچی: چیئرمین رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان نے اعلان کیا ہے کہ نئے اسلامی ماہ شعبان 1440 ہجری کا چاند نظر آگیا۔

تفصیلات کے مطابق شعبان کا چاند دیکھنے کےلیے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس چیرمین مرکزی رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمن کی زیر صدارت محکمہ موسمیات میں ہوا۔

علاوہ ازیں رویت ہلال کی زونل کمیٹیوں کا اجلاس بھی لاہور، کوئٹہ، پشاور سمیت دیگر علاقوں میں ہوا۔

شعبان کے چاند کی شہادتیں موصول ہونے کے بعد مفتی منیب الرحمان نے چاند نظر آنے کا اعلان کیا، یکم شعبان کل بروز اتوار 7 اپریل کو ہوگا۔ اس حساب سے شب برات 20 اپریل بروز ہفتے کی شب مذہبی عقیدت و احترام سے منائی جائے گی۔

خیال رہے اسلامی، ہجری یا قمری کلینڈرز میں شعبان آٹھواں مہینہ ہے، جسے شعبان المعظم بھی کہا جاتا ہے۔ رمضان المبارک کے بعد سب سے زیادہ اسی ماہ میں روزے رکھنے کا حکم ہے۔

بعض احادیث کے مطابق حضور نبی کریم پورے شعبان روزے رکھا کرتے تھے اور انہیں رمضان المبارک کے روزوں سے ملادیا کرتے تھے، اس ماہ کی پندرہویں رات کو شب برات آتی ہے جو بہت بابرکت رات ہے، جس میں فرزندان توحید رات بھر جاگ کر اپنے اللہ کو راضی کرنے کیلئے گناہوں سے توبہ کرتے ہیں۔

اس رات جس میں نئے سال کے لیے رزق، موت، پیدائش اور دیگر اہم معاملات سے متعلق حکم خداوندی سے فیصلے لکھے اور تبدیل کیے جاتے ہیں۔

شبِ برات کی اہمیت

ماہ شعبان کی پندرھویں رات کو عام طور پر شب برات یعنی بری ہونے کی رات کہا جاتا ہے، اس رات مسلمان توبہ کرکے گناہوں سے قطع تعلق کرتے ہیں اور جہنم سے نجات پاتے ہیں، بعض روایات کے مطابق رات اللہ تعالیٰ کی طرف سے اہل ایمان کے لئے عام معافی کا اعلان کیا جاتا ہے اور اُن کے تمام گناہ معاف بھی کردیے جاتے ہیں، اسی تناظر میں اس کا نام شبِ برات پڑا۔

اس رات کو لیلۃ المبارکۃ یعنی برکتوں والی رات، لیلۃ الصک یعنی تقسیم امور کی رات اور لیلۃ الرحمۃ یعنی رحمت نازل ہونے کی رات بھی کہا جاتا ہے۔

پندرہ شعبان کو مسلمان اپنے گناہوں سے توبہ استغفار کے لئے اللہ کے حضور سر بسجود ہوتے ہیں اور خصوصی عبادات کے ساتھ اسلام کی سربلندی، وطن عزیز کی سلامتی، خوشحالی اور اخوت و بھائی چارے کے فروغ کے لئے بھی خصوصی دعائیں کرتے ہیں۔

شب برات کی اہمیت اور فضائل کو اجاگر کرنے کے لیے علمائے کرام خصوصی مجالس کا اہتمام بھی کرتے ہیں۔اس کے ساتھ ہی اس رات کو ماننے والے اپنے عزیز و اقارب کی مغفرت کے لئے قبرستان جا کر قرآن خوانی اور فاتحہ خوانی کا خصوصی اہتمام بھی کرتے ہیں ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں