The news is by your side.

Advertisement

دس ارب کی پیش کش شہباز شریف کے قریبی ساتھی نے کی، عمران خان

اسلام آباد: تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پاناما کیس پر خاموشی اختیار کرنے کے لیے شہباز شریف کے قریبی ساتھی نے دو ہفتے قبل ملاقات کر کے 10 ارب روپے کی پیش کش کی۔

اے آر وائی کے پروگرام آف دی ریکارڈ میں گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ شہباز شریف کے قریبی ساتھی نے بتایا کہ شریف خاندان کی طرف سے پہلے بھی پیسوں کے پیش کش کی گئی مگر میری اُس سے دو ہفتے قبل ملاقات ہوئی جس میں اُس نے دس ارب روپے کی پیش کش کی۔

عمران خان نے کہا کہ نوازشریف نے اپنی کرپشن چھپانے کے لیے بہت لوگوں کر رشوت دینے کی پیش کش کی اور مجھے خریدنے کے لیے شہباز شریف کے قریبی ساتھی اور میرے عزیز کو بھیجا گیا۔

انہوں نے کہا کہ دبئی کے ذریعے ایک شخص نے دس ارب کی پیش کش ابتدائی ہے، شریف خاندان نے پاناما کیس پر خاموش رہنے کے لیے آپ کو آفر کی ہے جو مزید بڑھ بھی سکتی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ اب معاملہ لندن فلیٹ کا نہیں بلکہ شریف خاندان کے اثاثوں کا ہے، پاناما کیس ابھی ختم نہیں ہوا جے آئی ٹی تحقیقات کرے گی اور معاملہ دوبارہ بینچ میں آئے گا، اس کیس کی وجہ سے شریف خاندان کے تمام اثاثہ جات خطرے میں ہے۔

ویڈیو دیکھیں

پی ٹی آئی کے چیئرمین نے کہا کہ پاناما کیس کے بینچ نے قطری خط کو مسترد کردیا، شریف فیملی کو 13 سوالات کے جواب دینے ہوں گے، نوازشریف کے وزیر اعظم ہوتے ہوئے شفاف تحقیقات ممکن نہیں ہیں۔

ویڈیو دیکھیں

اُن کا کہنا تھا کہ جے آئی ٹی کے معاملے پر ہمیں اعتماد میں نہیں لیا گیا تاہم اس پر بہت نظر رکھیں گے، ہر 15 دن پر جے آئی ٹی رپورٹ سامنے آئی گی تو سارے حقائق عوام کے سامنے خود بہ خود آجائیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ  اگر جے آئی ٹی کے نتیجے میں نیا بینچ تشکیل دیا گیا تو اس کے خلاف وکلا سے مشاورت کر یں گے، ایسا نہیں ہوسکتا کہ نیا بینچ بنے اور پھر سے سماعت شروع، تحقیقات کے دوران اداروں پر عوامی دباؤ بڑھاتے رہیں گے تاکہ وہ اپنا کردار ادا کرسکیں۔

آصف زرداری پر تنقید کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ چار سال سے سابق صدر غائب تھے اچانت منظر عام پر آگئے ، پاناما فیصلے کے بعد نوازشریف وزیراعظم کی اخلاقی حیثیت کھو چکے ہیں اس لیے ساری جماعتیں اُن سے مستعفیٰ ہونے کا مطالبہ کررہی ہیں۔

مکمل انٹرویو دیکھیں

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں