The news is by your side.

Advertisement

شادی ہال مالکان نے حکومتی فیصلہ مسترد کردیا

کراچی: شادی ہال مالکان نے  نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے فیصلے کو مسترد کردیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق شادی ہال ایسوسی ایشن نے  وفاقی وزیراسدعمر کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے 10اگست سےشادی ہال کھولنےکی یقین دہانی کرائی تھی۔

شادی ہال  ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ حکومت 15 ستمبرسے متعلق فیصلے پر نظرثانی کرے کیونکہ مالکان پہلے ہی معاشی طور پر تباہ ہوچکے جبکہ اس شعبے سے وابستہ ہزاروں ملازمین بھی بے روزگار بیٹھے ہوئے ہیں۔

یاد رہے کہ آج نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر نے ملک بھر میں کرونا کی صورت حال کے حوالے سے اجلاس منعقد کیا جس میں معاونِ خصوصی برائے صحت اور تمام صوبوں کے حکام نے شرکت کی۔

مزید پڑھیں: حکومت کا ریسٹورنٹ ، شادی ہالز اور پارکس کھولنے پر غور شروع

صوبوں کی تجاویز پر حکومت نے معاشی صورت حال کے حوالے سے اہم فیصلے کیے۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ سفارشات اور نظر ثانی کے بعد ملک بھر کے تمام ریستورنٹس اور ہوٹل 8 اگست کھولنے کی اجازت دے گئی ہے جبکہ مارکیٹوں کے پرانے اوقات کار بھی بحال کردیے گئے ہیں۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ 14 اگست کی مناسبت سے ایس او پیز تیار کیے جارہے ہیں، کوروناوباکےحوالے سےکافی بہتری سامنےآئی ہے، کرونا کے خلاف جنگ میں پاکستان کی کامیابی کو دنیا مان رہی ہے جبکہ ایران میں وبا کی دوسری لہر جاری ہے، جس میں ہلاکتیں سامنےآرہی ہیں اور متاثرین کی تعداد بھی پہلے سے کہی زیادہ ہے۔

وفاقی وزیر نے بتایا کہ سیاحتی مقامات کے ریسٹورنٹس، ہوٹلز 8 اگست سے کھول دیے جائیں گے جبکہ سینیما، تھیٹر، عوامی تفریحی مقامات اور عجائب گھروں کو 10 اگست سے کھول دیا جاے گا۔

وفاقی وزیر نے بتایا کہ کبڈی،ریسلنگ سمیت جسمانی ٹکراؤ والے تمام کھیلوں پر بدستور پابندی برقرار رہے گی جبکہ دیگرکھیلوں کےانعقاد کی اجازت تماشائیوں کے بغیر دی جارہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: وبا کے دنوں میں خوشیاں ماند، شادی ہالز مالکان کا ملک بھر میں احتجاج کا اعلان

انہوں‌ نے کہا کہ ٹرین،ہوائی جہاز کوتمام اسٹیشنزپرجانےکی اجازت دی جارہی ہے،30ستمبرتک ٹرین،ہوائی جہاز میں سفرکےایس اوپیزبرقرار رہیں گے۔اسدعمرنے کہا کہ این سی سی نے 15ستمبر سے شادی ہالز کھولنے کا فیصلہ کیا ہے، بیوٹی پارلرز بھی 10اگست سے کھولنےکی اجازت دی گئی ہے، مزار اور درگاہوں پر سے پابندی اٹھائی جارہی ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ نجی و سرکاری اسکولز کھولنے کے حوالے سے 7 ستمبر کو اجلاس میں فیصلہ کیا جائے گا۔ بین الصوبائی اور دیگر ٹرانسپورٹ کو مکمل طور پر بحال کردیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں