ادویہ کی قیمتوں میں اضافہ ڈالر کے ریٹ بڑھنے پر ہوا: شفقت محمود -
The news is by your side.

Advertisement

ادویہ کی قیمتوں میں اضافہ ڈالر کے ریٹ بڑھنے پر ہوا: شفقت محمود

لاہور: وفاقی وزیرِ تعلیم شفقت محمود نے ادویہ کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ ڈالر کی قیمت میں اضافے کو قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیرِ تعلیم شفقت محمود نے لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں ادویہ کی قیمتوں میں اضافہ ڈالر کے ریٹ بڑھنے پر ہوا ہے۔

ڈالر کی قیمت بڑھنے سے امپورٹڈ اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔

وفاقی وزیر

شفقت محمود کا کہنا تھا کہ ڈالر کی قیمت بڑھنے سے امپورٹڈ اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔

انھوں نے مہنگائی کے حوالے سے حکومتی مؤقف دہراتے ہوئے کہا کہ کم آمدن والے طبقے کے لیے 4.0 فی صد مہنگائی بڑھی ہے۔

شفقت محمود نے پی ٹی آئی پر تنقید کرنے والوں کے منہ بند کرتے ہوئے کہا ’ہماری حکومت کے 10 دن بعد ہی جانے کی باتیں ہونے لگی تھیں۔‘

وفاقی وزیر نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کو 18 ارب ڈالر کا قرض ورثے میں ملا تھا، اس صورتِ حال سے نمٹنے کے لیے ہم اپنی چیزیں بیچتے یا پھر قرض لیتے، دوست ممالک نے آسان شرائط پر مدد کی۔

یہ بھی پڑھیں:  ڈالر کی بڑھتی قیمتوں کا شاخسانہ، ادویات کی قیمتوں میں اضافے کا خدشہ

یاد رہے کہ ایک ماہ قبل پاکستان فارما سیوٹیکل مینوفیکچرنگ ایسو سی ایشن کے صدر زاہد سعید نے کہا تھا کہ صنعت میں سنگین بحران کے باعث ادویات کی قیمتوں میں اضافہ نا گزیر ہو گیا ہے۔

انھوں نے کہا تھا کہ ڈالر، خام مال، بجلی اور گیس کی قیمتوں میں اضافے سے صنعت بحران کا شکار ہے۔ حکومت نے ادویات کی قیمتوں پر نظرِ ثانی نہیں کی تو 40 فی صد تک ممکنہ اضافہ ناگزیر ہو جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں