سعودی عرب: شاہ سلمان کا پریشان حال پاکستانیوں کو تنخواہ دینے کا حکم -
The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: شاہ سلمان کا پریشان حال پاکستانیوں کو تنخواہ دینے کا حکم

ریاض : خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز نے وزیر محنت ڈاکٹر مفرج الحقبانی کو کارکنوں کی تنخواہوں کا مسئلہ حل کرنے کی ہدایت کردی۔

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان کا کہنا تھا کہ تنخواہوں کے تحفظ پروگرام اور وزارت خزانہ کے ساتھ تعاون کرتے ہوئے نجی کمپنیوں کو پابند کیا جائے کہ وہ اپن کارکنوں کو لیبر قوانین کے مطابق وقت پر واجبات ادا کریں۔

اس سلسلے میں جن کمپنیوں کے حکومت کے ساتھ مختلف منصوبوں کے معاہدے ہیں انہیں حکومت کی طرف سے اس وقت تک ان کے واجبات نہ دیئے جائیں جب تک وزارت محنت کی طرف سے اس بات کی تصدیق نہ ہو کہ کمپنی نے کسی کارکن کی تنخواہ روکی ہوئی نہیں ہے۔


سعودی عرب میں پھنسے پاکستانی محنت کشوں کی دعائیں رنگ لے آئیں


اس سے قبل وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف نے سعودی عرب میں پھنسے پاکستانی مزدوروں کے اہل خانہ کے لیے 50 ہزار روپے فی خاندان مالی امداد کا اعلان کیا تھا ۔

وزیر اعظم ہاؤس کے ترجمان نے کہا تھا کہ اس مد میں وزیر اعظم پاکستان نواز شریف نے 500 ملین روپے کی خطیر رقم مختص کی ہے جو دس ہزار خاندانوں میں تقسیم کی جائے گی۔

وزیراعظم پاکستان نے وزارت سمندر پار پاکستانی و افرادی قوت کو سعودی عرب میں پھنسے پاکستانی مزدوروں کی فہرست اور مکمل تفصیلات جمع کرنے کی خصوصی ہدایت جاری کی تھی تاکہ ان کے مسائل کے حل اور رقوم کی تقسیم میں آسانی ہو۔


سعودی عرب میں پھنسے پاکستانیوں کے لیے امداد کا اعلان


واضح رہے کہ سعودی عرب میں روزگار کے حصول کے لیے مقیم ہزاروں پاکستانی کئی ماہ سے بے یارو مددگار پھنسے ہوئے ہیں یہ افراد مختلف کمپنیوں کے لیے سعودی عرب کے دور دراز علاقوں میں کام کر رہے تھے جنہیں نہ تو کئی ماہ کی تنخواہیں نہیں ملی ہیں بلکہ قیام و طعام کی نامناسب سہولیات کا بھی سامنا ہے۔

ذرائع کے مطابق تنخواہیں نہ ملنے اور پرسان حال کے نہ ہونے کے باعث کئی ملازمین ذہنی کوفت اور اذیت کا شکار ہو کر خودکشی کی کوشش کر چکے ہیں جب کہ کچھ ملازمین بیمار ہیں جن کو طبی امداد بھی نہیں مل پا رہی جب کہ ان ملازمین کے سفری دستاویزات بھی سعودی کمپنیوں کے پاس ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں