The news is by your side.

Advertisement

شاہ فیصل اور شہلا راشد نے آرٹیکل370ختم کرنے کا فیصلہ بھارتی سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا

نئی دہلی : مقبوضہ کشمیر کے سابق بیوروکریٹ شاہ فیصل اورسماجی کارکن شہلا راشد نے مقبوضہ کشمیرکی خصوصی حیثیت ختم کرنے کا مودی سرکار کا فیصلہ بھارتی سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں آرٹیکل370ختم کرنے کا فیصلہ بھارتی سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا گیا ، فیصلے کیخلاف درخواست سابق کشمیری بیوروکریٹ شاہ فیصل،شہلا راشدنے دائرکی درخواست کی۔

مقبوضہ کشمیر کے سابق بیوروکریٹ شاہ فیصل اورسماجی کارکن شہلا راشد کی دائر درخواست پر کل سماعت ہوگی۔

یاد رہے بھارتی ایڈووکیٹ ایم ایل شرما، مقبوضہ کشمیر کی نیشنل کانفرنس کے رہنما محمد اکبر لون اور جسٹس ریٹائرڈ حسنین مسعودی سمیت دیگر نے آرٹیکل 370 کی منسوخی کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔

سماعت میں بھارتی چیف جسٹس رنجن گوگی نے مقبوضہ کشمیرکی حیثیت ختم کرنےکی درخواست پر اعتراضات کرتے ہوئے کہا تھا اس پٹیشن میں کچھ نہیں، کیوں نہ درخواست کوٹیکنیکل بنیادوں پرمسترد کردوں۔

مزید پڑھیں : بھارتی چیف جسٹس نے مقبوضہ کشمیرکی حیثیت ختم کرنےکی درخواست پراعتراضات اٹھادئیے

خیال رہے جوڈیشل ایکٹوازم پینل نے 370 اے کو چیلنج کرنے کیلئے بھارتی سپریم کورٹ کو درخواست بھیجی تھی، جس میں چیف جسٹس سپریم کورٹ آف انڈیا سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے معاملہ پر ازخود نوٹس لینے کی درخواست کی گئی تھی

واضح رہے کہ بھارتی آئین میں مقبوضہ جموں و کشمیر کو خصوصی حیثیت حاصل تھی تاہم مودی حکومت نے آرٹیکل 370 ختم ککرکے یہ خصوصی حیثیت ختم کر دی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں