The news is by your side.

Advertisement

مودی سرکار انتخابات سے قبل کشمیر میں کوئی واقعہ رونما کراسکتی ہے، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد : وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مودی سرکار الیکشن سے پہلے ایک بار پھر مقبوضہ کشمیر میں کوئی واقعہ رونما کراسکتی ہے، اس کے عزائم سے دنیا کو آگاہ کررہے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام سوال یہ ہے میں میزبان ماریہ میمن سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا، وزیرخارجہ نے کہا کہ دو ایٹمی قوتیں لڑائی کا خطرہ مول نہیں لے سکتیں۔

مودی سرکار نے اپنی مقبولیت بڑھانے کیلئے پلوامہ واقعہ رونما کیا، اس واقعے کے بعد بھارت کے بیانیے کی قلعی کھل گئی ہے، اس کے تمام دعوے جھوٹے ثابت ہوئے۔

شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ مودی سرکار الیکشن سے پہلےایک ٹائم فریم میں مس ایڈونچر کرسکتی ہے، ایک بار پھر مقبوضہ کشمیر میں کوئی بڑا واقعہ رونما ہوسکتا ہے۔

پاکستان نے اپنی تشویش ،خدشات اور انٹیلی جنس رپورٹ شیئر کی ہے، اس حوالے سے اقدامات اٹھاتے ہوئے مودی سرکار کے عزائم سے عالمی برادری کو بھی آگاہ کررہے ہیں۔

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ26فروری کوبھارت نے جارحیت کی،عالمی قوانین کی خلاف ورزی کی، جس کے جواب میں پاکستان نے اپنے دفاع میں دو بھارتی جہاز مار گرائے۔

مودی سرکار اپنے بیانات داخلی سیاست کو مدنظر رکھ کر دے رہی ہے، بھارت میں الیکشن اس کا داخلی معاملہ ہے ہمارا اس سے کوئی تعلق نہیں، محبوبہ مفتی کا بیان مودی سرکار کیخلاف واضح ثبوت ہے۔

ایک سوال کے جواب میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ جہانگیر ترین کے حوالے سے مزید بات کرنا مناسب نہیں ہے، وہ لندن میں کیا کررہے ہیں یہ بات بھی میرے علم میں نہیں۔

انہوں نے کہا کہ مجھے جہانگیر ترین اور شہبازشریف کی لندن میں ممکنہ ملاقات کا بھی علم نہیں ہے، وزیراعظم عمران خان واضح الفاظ میں کہہ چکے ہیں کہ کسی سے بھی ڈیل اور ڈھیل کا کوئی ارادہ نہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں