The news is by your side.

Advertisement

کشمیر قید خانہ بن گیا، بھارت کی تقسیم واضح دکھائی دے رہی ہے، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد : وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کو قید خانہ بنا دیا گیا، پورے بھارت میں آگ لگ چکی ہے، تقسیم اب واضح دکھائی دے رہی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ دنیا کو کہا ہے کہ ہٹلرکی سوچ اور آر ایس ایس کی سوچ میں مماثلت ہے۔

آج دنیا دیکھ رہی ہے کہ نازی دور کی طرح کے حراستی مراکز آسام میں بنائے جارہے ہیں،5اگست کے جو اقدامات اٹھائے گئے اس کے بعد مقبوضہ کشمیرکو قید خانہ بنادیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پورے بھارت میں آگ لگ چکی ہے اور ہندوستان کی واضح تقسیم دکھائی دے رہی ہے، ایک طرف لوگ سیکولر بھارت کا پرچار کررہے ہیں تو دوسری طرف ہندوتوا کی تکمیل والے واضح نظر آرہے ہیں، عالمی میڈیا میں بھی ہندوتوا سے متعلق بحث جاری ہے، دنیا بھر کا میڈیا بھی اس وقت مودی کی اصل صورت دیکھ رہا ہے۔

شاہ محمود قریشی کا مزید کہنا تھا کہ طلبہ پہلے مقبوضہ کشمیر تک متحرک تھے اب پورے بھارت میں پھیل گئے، بابری مسجد، جامعہ ملیہ اور علی گڑھ یونیورسٹی میں جو ہوا سب نے دیکھا، اس وقت بھارت کا نوجوان طبقہ سڑکوں پر آگیا ہے۔

مودی سرکار پروپیگنڈا کررہی ہے کہ ان مظاہروں کو کانگریس ہوا دے رہی ہے، ہم کہتے ہیں کہ کوئی ہوا نہیں دے رہا، مودی سرکار کےاقدامات کی وجہ سے یہ سب ہورہا ہے، مودی کے اقدامات نے اس کو اتنا اجاگر کردیا ہے کہ جو لوگ پہلے بھارتی اپوزیشن اور پاکستان کے بیانیے کو نہیں سن رہے تھے اب اس کو سننے پر مجبور ہوگئے ہیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ بی جے پی نے خود بھارت کو تقسیم کردیا ہے، آر ایس ایس کی سوچ اور ہندوتوا کے عزائم سے بھارت تقسیم ہوا، بی جے پی نے الیکشن سے پہلے پلواما کا ڈرامہ رچایا، جھاڑ کھنڈ میں بی جے پی کو عوام نے مسترد کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پورے بھارت میں احتجاج اور لوگ سڑکوں پر ہیں، خدشہ ہے بھارت توجہ ہٹانے کیلئےایل او سی پر کوئی حرکت کرے گا اور فالس فلیگ آپریشن کرکے پاکستان پر الزام لگائے گا، ایل او سی پربھارت کی تازہ تعیناتیاں تو دیکھیں اندازہ ہوجائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں