The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنا حکومت کی اولین کوشش ہے، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد : وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت کی کوشش ہے پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالا جائے، ماضی میں حکومتوں نے ارادہ کیا مگر اس پر عمل نہیں کیا۔

یہ بات انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام سوال یہ ہے میں میزبان ماریہ میمن سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا، شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بھارت کی پوری کوشش ہے کہ پاکستان کو بلیک لسٹ میں ڈالا جائے اور گزشتہ ن لیگ کے دورحکومت میں پاکستان گرے لسٹ میں آچکا تھا۔

ماضی میں حکومتوں نے نام نکلوانے کا ارادہ کیا مگر اس پر عمل نہیں کیا، موجودہ حکومت نے مسمم ارادہ کیا ہے کہ اب اس عمل کو پورا کرنا ہے، صورتحال کو دیکھ کر جوابی اقدامات کرنا ہوں گے، بلیک لسٹ کے ملکی معیشت پر گہرے منفی اثرات مرتب ہوں گے۔

وزیرخارجہ کا مزید کہنا تھا کہ عوامی نمائندوں کے تحت اسمبلی کو چلانا ہم سب کا فرض ہے، بھارت دھمکیاں دے رہا ہے جس پر پارلیمنٹ کو سنجیدگی کا مظاہرہ کرنا چاہیے، ہمارے اختلافات سیاسی نوعیت کے ہیں اور وہ رہیں گے۔

اپوزیشن کو پارلیمنٹ میں احتجاج کا حق ضرور ہے مگر صورتحال کو بھی دیکھنا چاہیے، افسوس ہے کہ پارلیمنٹ میں سنجیدگی اور یکجہتی کی کمی دکھائی دے رہی ہے، اپوزیشن سے گزارش ہے کہ بھارتی دھمکیوں کے معاملے پر متحد ہونا چاہیے۔

ایک سوال کے جواب میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حالیہ معیشت اور ملکی صورتحال کے ذمہ دار کون لوگ ہیں یہ ایک دن کی بحث نہیں، اپوزیشن کیلئے عشائیہ اہمیت رکھتا ہے یا پاکستان کے مفادات؟ معاملات یہ ہیں کہ نیب کارروائی کرتا ہے تو یہ آزاد ادارہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ آغاسراج درانی کیخلاف بھی کیس پہلے سے چلا آرہا ہے،نیب پر غصہ ہے تو بدلہ حکومت اور عوام سے کیوں لیاجارہا ہے؟ اپوزیشن کو احتجاج کرنا ہے تو نیب سے کرے پارلیمنٹ میں کیوں؟

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں