The news is by your side.

Advertisement

موجودہ حکومت کے بجٹ کا کوئی اخلاقی جواز نہیں: شاہ محمود قریشی

تین صوبوں نے ایک سال کا بجٹ پیش کرنے پرواک آؤٹ کیا تھا

اسلام آباد: پی ٹی آئی رہنما شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت جو بجٹ پیش کررہی ہے اس کا کوئی اخلاقی جواز نہیں.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے بجٹ اجلاس کے دوران تقریر کرتے ہوئے کیا، ان کا کہنا تھا کہ آج نئی نئی روایات ڈالی جارہی ہیں، منتخب وزیرمملکت رانافضل کو نطر انداز کردیا گیا.

انھوں نے کہا کہ کوئی شک نہیں کہ حکومت کی رخصتی قریب ہے، حکومت ایک ماہ کی مہمان ہے اور پورے سال کا بجٹ پیش کررہی ہے.

شاہ محمود قریشی نے پی ٹی آئی کی نمائندگی کرتے ہوئے کہا کہ قانون سے ثابت کرسکتا ہوں بجٹ چار ماہ کے لئے بھی پیش کیاجاسکتاہے، بدقسمتی سے وزیر مملکت خزانہ کو نظرانداز کردیا گیا، پاکستان کی تاریخ میں ایسی کوئی مثال نہیں ملتی.

ان کا کہنا تھا کہ اس بجٹ کا کوئی اخلاقی جواز نہیں، ایک ماہ کی مہمان حکومت سال کا بجٹ پیش نہیں کرسکتی، بجٹ کو این ای سی اجلاس میں تین صوبوں نے منظورنہیں کیا.

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ تین صوبوں نے ایک سال کا بجٹ پیش کرنے پرواک آؤٹ کیا تھا، تین صوبے اس بجٹ پر عدم اعتماد کا اظہار کررہے ہیں، تین صوبوں کو بجٹ کےمعاملے پر نظراندازکرنامناسب نہیں


مسلم لیگ ن کی حکومت اپنا چھٹا اور آخری بجٹ آج پیش کرے گی


 خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں