The news is by your side.

Advertisement

بھارت کی دھمکیوں سےمرعوب نہیں ہوں گے، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی

ملتان : وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ بھارتی حکومت  کشیدگی کو ہوا دے رہی ہے بھارت کے پاس قابل عمل شواہدہیں تو ہمیں بتائے،،ہم مثبت جواب دیں گے لیکن دھمکیوں سےمرعوب نہیں ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق ملتان میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا وزیراعظم نے مفصل بیان میں پاکستان کا موقف پیش کردیا ، پلوامہ کا واقعہ رونما ہوتا ہے، جسے ہم آج بھی افسوناک واقعہ کہتے ہیں، واقعے کے بعد ہندوستان نے بلاتحقیق پاکستان پر الزام تراشی شروع کردی۔

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ بھارت میں انتخابات کاماحول ہےایک صورتحال پیداکی جارہی ہے، بھارتی حکومت کی طرف سے ایک جنون کی کیفیت ہے اور وہ کشیدگی کو ہوا دے رہی ہے، بھارت کے پاس قابل عمل شواہد ہیں تو ہمیں بتائے، بھارت ہمیں بتائے ہم مثبت جواب دیں گے، دھمکیوں سے مرعوب نہیں ہوں گے۔

بھارت کےپاس قابل عمل شواہدہیں تو ہمیں بتائے، ہم مثبت جواب دیں گے

شاہ محمود قریشی نے کہا وزیراعظم نے کہاہم اپنی زمین دہشت گردی کےلیےاستعمال نہیں ہونےدیں گے، ہم نےدہشت گردی کے خلاف جنگ میں 70 ہزار  افراد کی قربانیاں دیں، ہماری معیشت کودہشت گردی سے بڑا نقصان پہنچا، کم کبھی بھی دہشت گردی حمایت نہیں کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے واضح کر دیا نیا پاکستان ہے کسی غلط فہمی میں نہ رہےگا، بھارت کی طرف سے کچھ ہوا توجواب دیں گے، ہم بھارت کی کارروائی پر سوچیں گے نہیں جواب دے دیں گے۔

وزیرخارجہ نے کہا جو کچھ بھارت مقبوضہ کشمیر میں کررہا ہے وہ سب پرعیاں ہے، کوئی بھی اقوام متحدہ اور یورپی یونین کی رپورٹ کو دیکھ سکتاہے۔

مزید پڑھیں : بھارت نے حملہ کیاتوجواب دینےکاسوچیں گےنہیں بلکہ جواب دیں گے، وزیراعظم

خیال رہے وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں بھارت کو پیشکش کی تھی کہ بھارت کے پاس پلواما حملے کے ثبوت ہے تو پیش کرے کارروائی کریں گے اور واضح کیا تھا اگر بھارت نے پاکستان پر حملہ کیاتوجواب دینے کاسوچیں گے نہیں بلکہ جواب دیں گے۔

یاد رہےپلوامہ واقعے کے بعدبھارتی عزائم سے متعلق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کو خط لکھا تھا، جس میں بتایا گیا تھا بھارت پلوامہ حملے کا الزام پاکستان پر لگا رہا ہے، بغیرتحقیقات کئے حملے کا تعلق پاکستان سے جوڑنا مضحکہ خیز ہے، بھارت اپنی سیاست کیلئے جان بوجھ کر پاکستان مخالف بیان بازی کرکے فضا کشیدہ کررہا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا تھا عالمی برادری بھارت سے پلوامہ حملے کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کا مطالبہ کرے تاکہ حقائق سامنے آسکیں اور خبردار کیا کہ بھارت کی جانب سے سندھ طاس معاہدہ ختم کرنا سنگین غلطی ہوگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں