The news is by your side.

Advertisement

اسد عمر کو معیشت جس حالت میں ملی وہ پوشیدہ نہیں، شاہ محمود قریشی

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ اسد عمر ہماری ٹیم کا نمایاں چہرہ ہیں، اسد عمر کو معیشت جس حالت میں ملی وہ پوشیدہ نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خزانہ اسد عمر کی جانب سے وزارت چھوڑنے پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ اسد عمر کی خدمات کا اعتراف کرتا ہوں، آج وہ اپنے عہدے سے سبکدوش ہوگئے، اسد عمر نے بطور وزیر خزانہ دیانت داری سے کام کیا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کون کس وزارت میں کام کرے گا اس کا فیصلہ وزیراعظم عمران خان کریں گے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ پہلے بھی کہا تھا حکومت معاشی مشکلات کا شکار ہے، پی ٹی آئی کی حکومت آئی تو تاریخی مالیاتی خسارہ ملا۔

انہوں نے کہا کہ پچھلی حکومتوں نے بے دریغ قرض لیے جو نئی حدوں کو چھو رہے تھے، ماضی کی حکومت میں ڈالر کو عارضی سطح پر کھڑا کیا گیا، کوئی شک نہیں ڈالر اوپر جانے سے مہنگائی ہوئی ہے۔

مزید پڑھیں: اسد عمرنے وزارت خزانہ چھوڑدی، کوئی نئی وزارت نہیں لیں گے

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ 10 سال سے باتیں کی گئیں مگر اصلاحات نہ کی گئیں، ن لیگ حکومت جاتے جاتے 1280 ارب کا سرکلر ڈیٹ چھوڑ کر گئی۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ تحریک انصاف میں کوئی گروہ بندی نہیں ہے، ڈیموکریسی میں مختلف دوستوں کی مختلف رائے ہوتی ہے، جمہوریت کی خوبصورتی یہی ہے مختلف آرا سن کر فیصلہ کیا جاتا ہے، بہت سے معاملات ایسے ہوتے ہیں جن پر پارٹی میں ہی بحث ہونی چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ گروٹھ ریٹ بڑھنا چاہئے اس سے روزگار کے مواقع پیدا ہوتے ہیں، گزشتہ 10 سال کی پالیسی سے گروتھ ریٹ کی حوصلہ شکنی ہوئی، دس سال سے معیشت گرتی رہی تو گروتھ ریٹ کیسے بڑھے گا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اتنا بگاڑ پیدا ہوگیا تھا کہ ہم وقتی مقبولیت کو نہیں دیکھ سکتے تھے، پاکستان کی خاطر کچھ مشکل فیصلے کیے اور کرنے پڑیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں