The news is by your side.

Advertisement

فوج نے واضح کردیا، جمہوریت کو کوئی خطرہ نہیں، قریشی

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ آج پھر فوج نے واضح کردیا کہ جمہوریت کو فوج سے کوئی خطرہ نہیں، چند دن قبل فوج کے بیان پر احسن اقبال کا ردعمل نامناسب تھا، فوج نے ایسی کوئی بات نہیں کہی جو احسن اقبال کو واشنگٹن میں بیٹھ کر ردم عمل دینا پڑ گیا۔

اے آر وائی نیوز سے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ فوج کی جانب سے یہ بیان کئی بار آچکا ہے کہ فوج اپنی آئینی حدود میں رہتے ہوئے ہی کام کرے گی،احسن اقبال کا ردعمل نامناسب تھا، فوج نے ایسی کوئی بات نہیں کہی جو احسن اقبال واشنگٹن میں بیٹھ کر ردعمل دے رہے ہیں۔


یہ پڑھیں: جمہوریت کو فوج سے کوئی خطرہ نہیں، میجر جنرل آصف غفور 


انہوں نے کہا کہ آج بھی فوج نے کہا ہے کہ اُس سیمینار میں معاشی ماہرین بیٹھے تھے اور معیشت پر بات ہورہی تھی، آج بھی ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ ہمارے ٹیکس گزار افراد کم ہیں، آج بھی ہمارا انحصار بالواسطہ محصولات پر ہے، ٹیکسز کا 60 فیصد تنخواہ دار طبقہ دیتا ہے اور جو ڈائریکٹ ٹیکسز کی ادائیگی ہے اس کی تعداد انتہائی کم ہے، اگر ٹیکس کی بنیاد کمزور ہوگی تو بیرونی انحصار بڑھے گا۔

انہوں نے کہا کہ ان ساڑھے 4 برس میں ہم نے اتنا قرض لیا ہے کہ ہم پر بوجھ بہت بڑھ گیا، رہی یہ بات کہ آرمی نے یہ بیان عوام میں کیوں دیا تو یہ ایسی کوئی بات نہیں کہ یہ چونکا دینے والی بات ہو، یہ باتیں سب کو پتا ہیں۔

قریشی نے کہا کہ فوج نے بہت واضح پیغام دے دیا کہ جمہوریت کو فوج سے کوئی خطرہ نہیں، ہم اپنے آئینی کردار میں رہتے ہوئے کام کریں گے، جمہوریت کو خطرے والی بات فوج نے نہیں خود شاہد خاقان عباسی نے کی۔

 

قریشی نے کہا کہ فوج نے بہت واضح پیغام دے دیا کہ جمہوریت کو فوج سے کوئی خطرہ نہیں، ہم اپنے آئینی کردار میں رہتے ہوئے کام کریں گے، جمہوریت کو خطرے والی بات فوج نے نہیں خود شاہد خاقان عباسی نے کی۔

رہنما تحریک انصاف نے کہا کہ موجودہ وزیر خارجہ نے بیان دیا کہ ہم جوائنٹ آپریشنز کے لیے تیار ہیں جس کی دفتر خارجہ کو تردید کرنا پڑی، مشترکہ کارروائیاں تو ہماری پالیسی ہی نہیں رہی؟

ایک سوال پر شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ فوج کے کلیدی عہدوں پر تعیناتی سول حکومت کرتی ہے اور فوجی آپریشن کی اجازت بھی سویلین حکومت دیتی ہے تو جمہوریت کو خطرہ کیسا؟ جمہوریت کو خطرہ جمہوری تقاضے پورے نہ کرنے سے ہوگا؟

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں