لاہور: شہادت حضرت علیؓ کا جلوس آج نکالا جائے گا، 6ہزار پولیس اہلکار تعینات -
The news is by your side.

Advertisement

لاہور: شہادت حضرت علیؓ کا جلوس آج نکالا جائے گا، 6ہزار پولیس اہلکار تعینات

لاہور: شہات حضرت علی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کا مرکزی جلوس قدیم مبارک حویلی اندرون لاہور موچی گیٹ سے صبح ساڑھے نو بجے برآمد ہو گا،جلوس کو سخت سیکیورٹی دی جائے گی، حفاظت کے لیے چھ ہزار پولیس اہلکار تعینات کیے جائیں گے۔

نمائندہ اے آر وائی کے مطابق جلوس کی سیکیورٹی اور کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لیے چھ ہزار پولیس اہلکار سیکیورٹی کے فرائض انجام دیں گے ساتھ ہی اسپیشل برانچ اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اہلکاروں کی تعداد اس کے علاوہ ہو گی۔

پولیس کی مدد کے لیے حیدری اسکاﺅٹس کے ایک ہزار رضا کار بھی سیکیورٹی کے فرئض سر انجام دیں گے جس میں سات سو نوجوان لڑکے اور تین خواتین اہلکار شامل ہوں گی۔

جلوس کی سیکیورٹی کے لیے انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے اور جلوس میں شریک افراد کے لیے مخصوص راستے مختص کر دیئے گئے ہیں، جلوس کے کسی بھی راستے سے داخل ہونے کے لیے تین مقامات پر جامہ تلاشی ہو گی جبکہ واک تھرو گیٹس بھی انٹری پوائنٹس پر نصب کر دیئے گئے ہیں۔

جلوس کے راستوں پر بلند و بالا عمارتوں پر ڈبل روف ٹاپ چیک پوسٹیں قائم کر دی گئی ہیں۔ سیکیورٹی کی مانیٹرنگ سی سی پی او لاہور اور ڈی آئی جی آپریشن کریں گے۔ سیکیورٹی انتظامات کا لمحہ بی لمحہ جائزہ لینے کے لیے ڈی سی او آفس میں کنٹرول روم بھی قائم کر دیا گیا ہے ۔

جلوس اپنے مقررہ راستوں چوک نواب صاحب ، بازار حکیماں ، بازار شیعاں سے ہوتا ہوا رنگ محل پہنچے گا جہاں جلوس آغا حیدر علی موسوی کی امامت میں نماز ظہرین ادا کی جائے گی۔ نماز کی ادائیگی کے بعد جلوس کے شر کا دوبارہ اپنی منزل کی جانب رواں دواں رہیں گے۔

شہا دت حضرت علی ابن ابی طالب رضی اللہ تعالیٰ عنہ کا جلوس افطار سے قبل کر بلا گامے شاہ پہنچ کر ختم ہو جائے گا تاہم سیکیورٹی پلان کے مطابق کسی بھی ناخو شگوار واقعے سے نمٹنے کے لیے پو لیس اس وقت تک اپنے اپنے پوائنٹس پر موجود رہے گی جب تک تمام عزادار گھروں کو واپس نہیں چلے جاتے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں