The news is by your side.

Advertisement

کراچی کو رمضان میں بلاتعطل بجلی ملنی چاہیے، شہباز شریف

کراچی: مسلم لیگ ن کے صدر اور وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم کے مطالبات وزیراعظم کے سامنے پیش کروں گا، شہر کو رمضان کے ماہ میں بلا تعطل بجلی کی فراہمی اور یہاں بسنے والی تمام قومیتوں کو ریلیف ملنا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے صدر ہونے کی حیثیت سے شہباز شریف نے کراچی کا دورہ کیا اور عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے مرکز مردان ہاؤس کے علاوہ ایم کیو ایم کے مرکز بہادرآباد پہنچے جہاں انہوں نے سیاسی جماعتوں کے قائدین سے تفصیلی ملاقاتیں کیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف گورنر سندھ محمد زبیر کے ہمراہ ایم کیو ایم کے مرکز بہادرآباد پہنچے تو اُن کا رابطہ کمیٹی کی جانب سے شاندار استقبال کیا گیا، مسلم لیگ ن کے صدر سے ہونے والی ملاقات میں ایم کیو ایم کے رہنماؤں خالد مقبول صدیقی، عامر خان، کنور نوید، نسرین جلیل، میئر کراچی وسیم اختر و دیگر افراد نے شرکت کی۔

ایم کیو ایم ذرائع کے مطابق ملاقات میں سندھ کی سیاسی صورتحال اور کراچی میں جاری ترقیاتی منصوبوں پرسمیت بلدیاتی نظام، نگراں حکومت کے قیام اورانتخانی اتحادسےمتعلق گفتگو کی گئی جبکہ رابطہ کمیٹی کے اراکین نے شہر میں جاری لوڈشیڈنگ اور پانی کی قلت کے مسائل کو بھی بیان کیا۔

مزید پڑھیں: مسلم لیگ ن اوراے این پی میں‌ اتحاد، کراچی سے مل کر الیکشن لڑنے پر اتفاق

ذرائع کا کہنا تھا کہ مردم شماری کے بعد کراچی میں ہونے والی حلقہ بندیوں اور نگراں حکومت کے حوالے سے بھی ناموں پر غور کیا گیا جبکہ دونوں جماعتوں نے مستقبل میں تعلقات بڑھانے اور ساتھ چلنے پر اتفاق کیا، ایم کیو ایم رہنماء نے دوران ملاقات مؤقف اختیار کیا کہ ’وفاق اور سندھ آپس میں لڑ رہے ہیں جس کا خمیازہ شہر قائد کو بھگتنا پڑ رہا ہے، ترقیاتی کام التوا کا شکار ہیں جبکہ کراچی پیکج پر بھی کوئی عمل ہوتا نظر نہیں آرہا‘۔

ایم کیو ایم رہنماؤں نے شکایتی انبار بیان کرتے ہوئے کہا کہ میئر کراچی وسیم اختر کام کرنا چاہتےہیں مگر فنڈز کی قلت ہے اور صوبائی حکومت بالکل تعاون نہیں کر رہی، اگر مسائل حل نہ ہوئے تو عوام کے ساتھ متحدہ بھی کھڑی ہوگی، علاوہ ازیں رابطہ کمیٹی نے شہباز شریف سے مطالبہ کیا کہ انہیں  الیکشن مہم کےلیےآزادماحول فراہم کیاجائے اور  شہر میں بند کیے جانے والے دفاتر  فی الفور کھولے جائیں۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیو ایم رہنما ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ  شہباز شریف کی آمد اور ملاقات صرف فوٹو سیشن تک محدود نہیں تھی بلکہ ہم نے اُن کو کراچی کا دکھ بیان کیا اور تمام مسائل سے آگاہ کیا جسے انہوں نے مکمل طور پر سنا۔

اُن کا کہنا تھا کہ سندھ میں مصنوعی اکثریت رکھنے والی جماعت کی حکومت سب پرمسلط ہے، کراچی کی آبادی کومردم شماری میں کم دکھایاگیا، شہبازشریف کوبتایا کہ کراچی کے عوام کو ایک بڑی سازش کےتحت کم کر کے دکھایاجارہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: دن رات کام کرکے کراچی کی روشنیاں واپس لائیں گے: شہباز شریف

ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ امن انصاف کی ضمانت نہیں دیتا بلکہ انصاف ہی دراصل امن کا ضامن ہے،  30سال سے ایم کیوایم اچھےبرے دور میں شہری علاقوں کی نمائندہ جماعت رہی مگر ہمارے ساتھ انصاف نہیں کیا گیا۔ اُن کا کہنا تھا کہ پانی، لوڈشیڈنگ سےمتعلق معاملات پربھی بات چیت ہوئی اس کے علاوہ اختیارات کی نچلی سطح تک منتقلی اور عوام کو جمہوریت کے ثمرات پہنچانے کے لیے شہباز شریف سے مدد کا مطالبہ کیا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ایک ہفتے میں کراچی کا دوسرا دورہ ہے، ایم کیو ایم قیادت سے ہونے والی ملاقات سیاسی نہیں تھی جو بہت مفید رہی، کراچی کے ساتھ ماضی میں جو ہوا وہ زیادتی اور ظلم کی داستان ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ کراچی کے لئے جو فنڈز دیےگئے وہ کہاں گئے؟ کیونکہ شہر میں مسائل کے انبار ہیں۔

 شہاز شریف کا کہنا تھا کہ کراچی روشنیوں کاشہرکہلاتاہے،اس کونجانےکس کی نظر لگ گئی تھی، شہر میں بھتہ خوری، ٹارگٹ کلنگ اور نہ جانے کیا کیا  واقعات ہوئے بہت افسوسناک ہیں، رینجرز کی مدد سے شہر کی 90 فیصد روشنیاں واپس لوٹا دیں کیونکہ اگر کراچی میں امن قائم نہیں ہوتا تو پاکستان میں امن کا قیام مشکل تھا۔

وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ کراچی دراصل پاکستان کا چہرہ ہے مگر یہاں کی حالت زار بہت بری ہوگئی ہر طرف کچرے کا ڈھیر اور گندگی نظر آتی ہے، میں یہاں تنقید کرنےنہیں آیا بلکہ امن اور بھائی چارےکاپیغام دینے آیا ہوں، ہم سب کو مل کر عوام کےمسائل حل کرنے اور ترقی کی جانب گامزن ہونا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کی گورنرسندھ سے ملاقات

اُن کا کہنا تھا کہ وزیراعظم شاہدخاقان کل کراچی میں تشریف لائیں گے، اُن سے استدعا کی ہے کہ شہر میں جاری لوڈشیڈنگ کے مسائل کو حل کروانے میں اپنا کردار ادا کریں اور رمضان میں بلاتعطل شہریوں کو بجلی کی فراہمی یقینی بنائیں۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ 70سال میں بس باتیں اورتقریریں کی گئیں مگر کوئی عملی کام نظر نہیں آیا، ایم کیوایم پاکستان کے تمام مطالبات کل وزیراعظم کےسامنےپیش کروں گا، ہم اپنے طور پر معاملات کو حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کریں گے باقی نتائج اللہ کے ہاتھ میں ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ ہم سب کو مل کر نہ صرف کراچی بلکہ پورے پاکستان کی خدمت کرنی ہے، ہم شہرکے دکھ درد اور محرومیوں کوخوشی میں تبدیل کردیں گے اور ہر گھر میں پانی پہنچائیں گے، سب کو مل کر شہر میں جاری گرین لائن،ییلولائن بس منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچانا ہے۔

مسلم لیگ ن کے صدر کا مزید کہنا تھا کہ ایم کیو ایم شہری سندھ کی اہم اسٹیک ہولڈر ہے اسے مستقبل میں ساتھ لے کر چلیں گے اور ان کی تمام جائز شکایات کا ازالہ جلد از جلد کیا جائے گا،  شہباز شریف نے ایم کیو ایم کو یقین دہانی کروائی کہ آپ کے جائز مطالبات مانے جائیں گے اور کراچی پیکج ےک حوالے سے اقدامات بھی ہوتے نظر آئیں گے۔

مزید پڑھیں: پانی کے بحران پر کراچی میں فسادات ہوسکتے ہیں، چیف جسٹس کچھ کریں:‌ فاروق ستار

قبل ازیں وزیر اعلیٰ پنجاب نے عوامی نیشنل پارٹی کے مرکز مردان ہاؤس کا دورہ کیا اور اے این پی وفد سے ملاقات کی، میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اُن کا کہناتھا کہ کراچی کی روشنیاں واپس لا کرکھویا مقام دلائیں گے، ہم سب کو انا ایک طرف رکھ کر شہر کی ترقی کے لیے کام کرنا اور ہر قسم کی لسانی تفریق کو ختم کرنا ہے۔

اس موقع پر شاہی سید کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ شہباز شریف کو حقیقی قوم پرست سمجھتا ہوں، انہوں نے اپنے صوبے کی ترقی کے لیے بہت کام کیا جس کے نتائج سب کے سامنے ہیں، کراچی نے ماضی میں بہت زخم کھائے جس کی وجہ سے سب کا ہی نقصان ہوا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں