The news is by your side.

Advertisement

شہباز شریف کی عبوری ضمانت میں پیر تک توسیع

لاہور: لاہور ہائی کورٹ نے مسلم لیگ ن کے صدر اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی ضمانت میں پیر تک توسیع کر دی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں میاں شہباز شریف کی منی لانڈرنگ کیس میں عبوری ضمانت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ جسٹس سردار احمد نعیم کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے درخواست ضمانت پر سماعت کی۔شہباز شریف عدالت میں پیش ہوئے۔

اپوزیشن لیڈر کے وکیل نے سماعت کے دوران دلائل دیتے ہوئے کہا کہ حکومت کے مشیر اعلان کر رہے ہیں کہ ہم شہباز شریف کو جیل میں ڈال کر نشان عبرت بنائیں گے۔ یہ طے کر کے بیٹھے ہیں کہ شہباز شریف جیل جانے کے لیے اپنے کپڑے ساتھ لائیں۔

امجد پرویز نے کہا کہ نیب پہلے دن سے شہباز شریف کو گرفتار کرنے کا دماغ بنا چکا ہے، جب ریفرنس فائل ہو چکا ہے تو پھر گرفتاری کی کیا ضرورت ہے؟

قائد حزب اختلاف کے وکیل نے کہا کہ شہباز شریف قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر ہیں، ان کی آئینی ذمہ داریاں ہیں، شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالا گیا جسے عدالت نے کالعدم قرار دیا۔

شہباز شریف نے عدالت میں بیان دیا کہ جس دن سنا تھا کہ کورونا کی وجہ سے فلائٹس بند ہو رہی ہیں،آخری فلاٸٹ تھی جس کے ذریعے ملک واپس آیا اور نیب کی کارروائی کا سامنا کیا۔

بعدازاں لاہور ہائی کورٹ نے منی لانڈرنگ اور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں شہباز شریف کی عبوری ضمانت میں 28 ستمبر تک توسیع کر دی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں