The news is by your side.

Advertisement

لاہور میں آئس کریم پارلر ملازم کا قتل، پولیس کا سنسنی خیز انکشاف

لاہور: دو روز قبل شاہدرہ میں قتل کئے گئے آئس کریم پارلر ملازم کے قاتلوں کا سراغ مل گیا، پولیس نے چشم کشا انکشافات کرڈالے۔

پولیس ذرائع کے مطابق ستائیس جون کو شاہدرہ میں آئس کریم پارلر کے قتل کی گھتی سلجھ گئی، واقعے میں ملوث ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا ہے، گرفتار ملزم میں مقتول کا بھائی بھی شامل ہے، جس کا نام اسامہ بتایا گیا ہے،

پولیس نے بتایا کہ مرکزی ملزم سفیان عرف سنی کو وقوعہ کے روز ہی گرفتار کرلیاتھا جبکہ اسامہ پر قتل کی واردات میں مرکزی ملزم کی معاونت کاشبہ ہے۔

پولیس نے انکشاف کیا کہ ملزم سفیان عرف سنی بچےسے تعلقات استوار کرناچاہتا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: منگھو پیر قتل کیس کا ڈرامائی موڑ، بچی کے ٹوٹے الفاظ نے قاتل گرفتار کرادئیے

ادھر وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ شاہدرہ میں قتل ہونے والے بچے کا ملزم پکڑا جا چکا ہے اور ان کے خلاف سخت کارروائی ہوگی۔

مقتول بچے کے اہلخانہ سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ قانون موجود ہے لیکن انصاف میں تاخیر ہوتی ہے اور ان ملزموں کو مثال بنا دینا چاہیے۔

واضح رہے کہ شاہدرہ میں 27 جون کو لاپتا کم سن بچے کی لاش برآمد ہوئی، جسے تیز دھار آلے سے قتل کیا گیا تھا۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے واقعہ کا نوٹس لیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں