شاہد آفریدی کی نقیب اللہ کے والد سے ملاقات shahid afridi meets naqeeb
The news is by your side.

Advertisement

شاہد آفریدی کی نقیب اللہ کے والد سے ملاقات

اسلام آباد: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور کراچی کنگز کے صدر شاہد خان آفریدی نے جعلی پولیس مقابلے میں جاں بحق ہونے والے نوجوان نقیب اللہ محسود کے والد سے ملاقات کی اور بیٹے کے بچھڑنے پر تعزیت کی۔

تفصیلات کے مطابق 13 جنوری کو کراچی کے علاقے اسٹیل ٹاؤن میں مبینہ پولیس مقابلے میں جاں بحق ہونے والے قبائلی نوجوان نقیب اللہ محسود کی بے گناہی کا پوری قوم نے ثبوت دیا اور لواحقین کو انصاف دلوانے کا مطالبہ کیا۔

ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کی سربراہی میں 13 جنوری کو پولیس پارٹی نے خطرناک ملزمان کی گرفتاری کے لیے شاہ لطیف ٹاؤن میں چھاپہ مارا اور الزام عائد کیا کہ دہشت گردوں نے اہلکاروں پر فائرنگ کی جس کے بعد جوابی فائرنگ میں 4 تحریک طالبان کے کارندے ہلاک ہوئے جن میں نقیب اللہ محسود بھی شامل تھا۔

مزید پڑھیں: نقیب اللہ قتل کیس، راؤانوار کا پیغام میڈیاپرچلانے پر پابندی، گرفتاری کے لیے مزید 10 دن کی مہلت

قبائلی نوجوان کی ہلاکت کے بعد سوشل میڈیا پر صارفین نے پرزور احتجاج کیا جس کے بعد یہ معاملہ ذرائع ابلاغ تک پہنچا اور پھر آئی جی سندھ نے  واقعے کی اصل حقیقت جاننے کے لیے ڈی آئی جی ایسٹ کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دی۔

تحقیقات کے دوران ٹیم کے سربراہ ثناء اللہ عباسی نے راؤ انوار کو تفتیشی ٹیم کے سامنے پیش ہونے کا پیغام ارسال کیا مگر انہوں نے اسے ملحوظ خاطر نہ رکھتے ہوئے کسی بھی فارم پر پیش نہ ہونے کا اعلان کیا۔

شاہد خان آفریدی نے اسلام آباد میں نقیب اللہ محسود کے والد سے ملاقات کی اور بیٹے کی ہلاکت پر گہرے افسوس کا اظہار کیا۔

مزید پڑھیں: نقیب اللہ محسود: مظلوم نوجوان کو مصوروں‌ کا خراج تحسین

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر تحریر کیا کہ ’میں نقیب اللہ محسود کے اہل خانہ سے دکھی دل کے ساتھ تعزیت کرتا ہوں، نوجوان کی ہلاکت پر فیملی کا جو نقصان ہوا وہ کسی بھی طریقے سے پورا نہیں کیا جاسکتا‘۔

کراچی کنگز کے صدر کا کہنا تھا کہ ’اگر اس کیس میں انصاف ہوگیا تو مستقبل میں اس طرح کے معاملات سامنے نہیں آئیں گے، اللہ ہم سب پر اپنی رحمتوں کا سایہ کرے‘۔

واضح رہے کہ نقیب اللہ قتل کیس پر سپریم کورٹ کے چیف جسٹس نے ازخود نوٹس لیا تھا، گزشتہ سماعت پر جسٹس ثاقب نثار نے راؤ انوار کی گرفتاری کے لیے آئی جی سندھ کو مزید 10 روز کی مہلت دیتے ہوئے سابق ایس ایس پی ملیر کو عہدے سے برطرف کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

اسے بھی پڑھیں: نقیب اللہ کی ہلاکت: گلوکارہ رابی پیر زادہ رنجیدہ، سالگرہ نہ منانے کا اعلان


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی والپرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں