site
stats
پاکستان

عالمی میڈیا پاکستان کی صحیح صورتحال نہیں دکھارہا، شاہد خاقان عباسی

shahid khaqan

نیو یارک : وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ عالمی میڈیا پاکستان کی صحیح صورتحال نہیں دکھارہا، پاکستان نے دہشت گردی کیخلاف اہم کامیابیاں حاصل کیں، پاک امریکا تعلقات میں اتارچڑھاؤآتارہتا ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان امریکا بزنس کونسل سے خطاب اور بعد ازاں سی این این کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کیا، وزیر اعظم نے کہا کہ 2013میں جب نواز لیگ نے حکومت سنبھالی تو حالات مختلف تھے،4سال میں توانائی کے شعبے میں بہت سے اقدامات کئے۔

مستقبل میں پاکستان دنیا کی 20ویں بڑی معیشت ہوگا

آج پاکستان میں شرح نمو5.3 فیصد پر پہنچ چکی ہے، توانائی کے متعدد منصوبوں پر کام جاری ہے، توانائی شعبے میں دس ہزارمیگاواٹ کا اضافہ کیا ہے، پاکستان اسٹاک ایکس چینج دنیاکی بہترین مارکیٹوں میں سےایک ہے،2030میں پاکستان دنیا کی20ویں بڑی معیشت ہوگا۔

اس کے علاوہ پانی کی ضروریات پوری کرنے کیلئے ڈیموں کی تعمیر کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ افغانستان سے متعلق امریکی حکومت کے ساتھ مل کرکام کر رہے ہیں۔

وزیر اعظم شاہدخاقان عباسی نے کہا کہ سرمایہ داروں کے لئے پاکستان میں ماحول سازگار ہے، امریکی کمپنیاں پاکستان میں معاشی مواقع سے فائدہ اٹھائیں، امید ہے پاکستان امریکا بزنس کونسل کا تعاون جاری رہے گا۔

پاک امریکا تعلقات میں اتارچڑھاؤآتا رہتا ہے

علاوہ ازیں شاہد خاقان عباسی نے سی این این کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان اورامریکا کی 70 سال کی پرانی دوستی ہے، پاکستان اور امریکا دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اتحادی ہیں، دونوں ممالک کے تعلقات میں اتار چڑھاؤ آتا رہتا ہے۔

دہشت گردی کے خاتمےکیلئے امریکا کے ساتھ مل کرکام کرنا چاہتے ہیں، پاکستان اور امریکا کا دشمن مشترکہ ہے، پاک امریکا تعلقات میں تبدیلی کا نہیں سوچا، ہم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑی اور بہت قربانیاں دیں ہیں، آج بھی پاک فوج دہشت گردوں کے خلاف برسرپیکار ہے، دہشت گردی ہر کسی کے لئے خطرہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت پاکستان کے لئے خطرہ ہے، بھارت کےخلاف ہم نےتین جنگیں لڑیں، ہم نے بھارتی خطرے کے جواب میں نیوکلیئر بم بنایا۔

وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا کو جوہری تجربوں سے متعلق ذمہ دارانہ رویہ اپنانا چاہئے، واضح کردیں کہ شمالی کوریا کے ایٹمی پروگرام میں پاکستان نے کوئی تعاون نہیں کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top