The news is by your side.

Advertisement

ایل این جی کیس، شاہد خاقان عباسی 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

اسلام آباد: احتساب عدالت نے ایل این جی اسکینڈل کیس میں گرفتارسابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے ایل این جی اسکینڈل میں گرفتار مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے خلاف کیس کی سماعت کی۔

مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی کو دوسری بار جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر عدالت کے سامنے پیش کیا گیا۔

عدالت میں سماعت کے دوران جج نے نیب پراسیکیوٹر سے استفسار کیا کہ مزید کتنا ریمانڈ چاہیے؟ جس پر پراسیکیوٹر نیب نے جواب دیا کہ 14 روز کا مزید ریمانڈ چاہیے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ جتنا چاہتے ہیں ریمانڈ دے دیں، دوران تفتیش دستاویزات مانگ لیتے ہیں، جو سوالات پوچھتے ہیں ان کا جواب دے دیتا ہوں۔

معزز جج نے ریمارکس دیے کہ 14 روز کا ریمانڈ دے دیتا ہوں، تفتیش مکمل کرنے کی کوشش کریں۔

بعدازں احتساب عدالت نے ایل این جی اسکینڈل کیس میں گرفتارسابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے خلاف کیس کی سماعت 29 اگست تک ملتوی کردی۔

نیب نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو گرفتار کرلیا

یاد رہے 18 جولائی کو قومی احتساب بیورو (نیب) نے مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو گرفتار کیا تھا۔ نیب نے شاہد خاقان عباسی کو ایل این جی کیس میں طلب کر رکھا تھا لیکن انہوں نے نیب میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ کیا تھا۔

بعد ازاں احتساب عدالت نے ایل این جی کیس میں گرفتار مسلم لیگ ن کے رہنما و سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو 13 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں