The news is by your side.

Advertisement

35 سال میں پہلی بار سیاسی جماعتوں میں ڈائیلاگ منقطع ہوئے: شاہد خاقان

کراچی: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ 35 سال میں پہلی بار ایسا ہوا ہے کہ سیاسی جماعتوں میں کوئی ڈائیلاگ نہیں ہو رہے، کوئی رابطہ نہیں ہو رہا، سیاسی جماعتوں کے درمیان ڈائیلاگ کی کمی کی ذمہ دار وفاقی حکومت ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے ایم کیو ایم رہنما فاروق ستار سے ملاقات کی، بعد ازاں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ہم شہباز شریف کی ہدایت پر پرانے ساتھی فاروق ستار کے پاس آئے ہیں، سیاسی جماعتیں اپنے سیاسی ڈائیلاگز برقرار رکھتی ہیں، سیاسی ڈائیلاگز کے لیے ہمیشہ حکومت ہاتھ آگے بڑھاتی ہے لیکن پہلی بار ہوا ہے کہ کوئی ڈائیلاگز نہیں ہو رہے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ کراچی عام شہر نہیں یہ پاکستان کا دل ہے، کراچی ترقی نہیں کرے گا تو پاکستان بھی ترقی نہیں کرے گا، کراچی کے مسائل حل نہیں ہوں گے تو پاکستان کے مسائل بھی حل نہیں ہوں گے، پاکستان میں گورنرز کا ماڈل ناکام ہو چکا ہے، پاکستان کو ایک فری اینڈ فیئر الیکشن کی ضرورت ہے۔

شہباز شریف کی ہدایت پر 4 رکنی پارٹی وفد کراچی پہنچ گیا

فاروق ستار کا کہنا تھا کہ ن لیگ اور ہم نے پارلیمان میں ایک ساتھ کام کیا، ہمارے درمیان رابطے آسان ہیں تو گلے شکوے بھی چلتے رہتے ہیں، ہم نے ایک دوسرے سے گلے شکوے کیے ہیں، اب ملک کی صورت حال کے پیش نظر سیاسی مفاہمت نہیں بلکہ قومی ایجنڈا وضع کرنے کی ضرورت ہے، عام آدمی دیوار سے نہیں لگا بلکہ دیوار میں چنوا دیا گیا ہے، قومی ایجنڈے میں ہمارا فوکس معیشت پر ہونا چاہیے۔

انھوں نے کا کہ کراچی میں 12 سال میں ایک قطرہ پانی میں اضافہ نہیں ہوا، گزشتہ 2 سال میں موجودہ حکومت بری طرح ناکام ہوئی، معاشی بحران سنگین ہے، دکانیں اور گھر توڑے گئے لیکن ان کو متبادل نہیں دیا گیا۔

بعد ازاں، مسلم لیگ نون کے وفد نے شاہد خاقان عباسی کی قیادت میں ادارہ نور حق جا کر سابق میئر کراچی نعمت اللہ خان کے انتقال پر تعزیت کی، شاہد خاقان نے کہا کہ نعمت اللہ خان مرحوم کراچی کے محسن تھے، انھوں نے ریکارڈ ترقیاتی کام کرائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں