The news is by your side.

طاہر داوڑ کے قاتل جہاں بھی ہوں انجام تک پہنچائیں گے، شہریارآفریدی

اسلام آباد : وزیرمملکت داخلہ شہریار آفریدی کا کہنا ہے طاہر داوڑ کے قاتل جہاں بھی ہوں انجام تک پہنچائیں گے،  پاکستان مخالف قوتیں حالات خراب کرنے کی کوشش کررہی ہیں، ملک دشمن قوتیں پھرمتحرک ہیں ہمیں مل کرکام کرنا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر مملکت برائےداخلہ شہریارآفریدی نے سینیٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ایس پی طاہرداوڑکاقتل انتہائی افسوسناک اور تکلیف دہ ہے، پولیس کوایک اعلیٰ مقام پر پہنچایا تھا لیکن آج اس پرسوالیہ نشان لگا ہے، ایس پی طاہرداوڑ شہید پر ماضی میں2 خود کش حملے ہوئے اور  وہ محفوظ رہے، ان بھائی اور بھابھی کو بھی شہید کیا جاچکا ہے۔

شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ ایس پی طاہراسلام آبادمیں ایک شادی کی تقریب میں شرکت کیلئےپہنچےتھے ، ان کو 28اکتوبرکواسلام آباد سےاغواکیاگیا، 28 اکتوبرسے13نومبرتک ایس پی طاہرکوٹریس کرنےکی کوشش کی گئی، جس کے بعد 13 نومبرکوایس پی طاہرکی فوٹیج منظرعام پرآئیں۔

وزیر مملکت برائےداخلہ نے کہا وزیراعظم نے واقعے کا نوٹس لیےاورفوری تحقیقات کاحکم دیا، افغان حکومت سےبھی رابطےکیےجارہےہیں، پاکستان مخالف قوتیں حالات خراب کرنےکی کوشش کررہی ہیں۔

پاکستان مخالف قوتیں حالات خراب کرنےکی کوشش کررہی ہیں

شہریار آفریدی

ان کا کہنا تھا کہ سیف سٹی پروجیکٹ کےنام پراربوں روپےلگائےحقیقت بتاناچاہتاہوں، سیف سٹی پروجیکٹ میں لگےکیمرےنمبرپلیٹ تک ٹریس نہیں کر سکتے، ایس پی طاہرکواسلام آباد سے اغوا کرنے کے بعد پنجاب کےراستے فاٹالےجایاگیا، فاٹاکےراستےایس پی طاہرداوڑکوافغانستان منتقل کیاگیا۔

شہریار آفریدی نے کہا افغان سرحد پران کی جانب سےپیٹرولنگ نہ ہونےسےاغواکاروں کوفائدہ ہوا، افغان حکومت کوکئی بارکہاپٹرولنگ کریں لیکن وہاں سےرسپانس نہیں ملا، ماضی میں بھی ہماری دھرتی کے کئی بیٹوں کواغواکرکےافغانستان میں قتل کیاگیا۔

وزیر مملکت کا کہنا تھا کہ ایف آئی اےسےمتعلق بات کی توماضی میں بڑی تنقیدکانشانہ بنایاگیا، اداروں کوٹھیک کرنےجارہےہیں، ایف آئی اےآپ کی منسٹری ہےاسےآپ ٹھیک کریں، میں تواپناکرداراداکروں گالیکن کل کوئی پھریہ نہ کہےکہ ہمیں ٹارگٹ کیا جارہا ہے۔

انھوں نے مزید کہا ایوان میں اس لیے بات کی کہ ایس پی طاہر قوم کا بیٹا تھا، مشترکہ بیان جانا چاہیے، طاہرخان داوڑ کے قاتل جہاں بھی ہوں ان کو نشان عبرت بنائیں گے، کچھ لوگ ملک میں پاکستان کو غیر مستحکم کررہے ہیں ملک دشمن قوتیں پھرمتحرک ہیں ہمیں مل کرکام کرناچاہیے۔

یاد رہے اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے ایس پی طاہرداوڑ کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے وزیر مملکت داخلہ شہریارآفریدی کوتحقیقات کی نگرانی کا حکم دیا اور  خیبرپختونخواکی پولیس کو تحقیقات میں اسلام آبادپولیس سے تعاون کرنے کی ہدایت کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں