The news is by your side.

Advertisement

شہزاد اکبر کا مریم اورنگزیب کے بعد ایک اور لیگی رہنما کو 50کروڑ روپے ہرجانے کا نوٹس

اسلام آباد : مشیر داخلہ برائے احتساب شہزاد اکبر نے ایک اور ن لیگی رہنما کو 50کروڑ روپے ہرجانے کا نوٹس بھیج دیا، نوٹس میں کہا گیا ہے کہ عظمیٰ بخاری  نے جو الزامات لگائےانہیں ثابت کرنا ہوگا ، وہ اپنے جھوٹے بیان پر غیرمشروط معافی مانگیں۔

تفصیلات کے مطابق شمشیر داخلہ برائے احتساب شہزاد اکبر مریم اورنگزیب کے بعد لیگی ایم پی اے عظمیٰ بخاری کو50کروڑ روپےہرجانے کا نوٹس بھیج دیا، جس میں کہا گیا ہے کہ عظمیٰ بخاری نےمجھ پرکمیشن لینےکےالزامات لگائےہیں، الزام لگانےپرلیگل نوٹس بھیجاہے۔

لیگل نوٹس میں کہا گیا کہ عظمیٰ بخاری نےجوالزامات لگائےانہیں ثابت کرناہوگا، اگر وہ الزامات ثابت نہیں کرتیں توعدالت میں سامنا کریں اور اپنے جھوٹے بیان پر غیرمشروط معافی مانگیں۔

گذشتہ روز مشیر داخلہ برائے احتساب شہزاد اکبر کی جانب سے ترجمان ن لیگ مریم اورنگزیب کو 50 کروڑ ہرجانے کا نوٹس بھیجا گیا تھا ، نوٹس میں کہا گیا تھا کہ مریم اورنگزیب مجھ سے متعلق ہتک آمیز بیان واپس لیں، وہ اپنے بیانات پر 14 دن میں غیر مشروط معافی مانگیں۔

مزید پڑھیں : شہزاد اکبر نے مریم اورنگزیب کو ہرجانے کا نوٹس بھیج دیا

نوٹس میں کہا گیا ہے کہ مریم اورنگزیب نے آج نیوز کانفرنس کے دوران جھوٹا اور ہتک آمیز بیان دیا، انہوں نے مجھ پر الزام لگایا کہ براڈ شیٹ سے 50 فیصد کمیشن لینے کی کوشش کی۔

شہزاد اکبر کے نوٹس کے مطابق مریم اورنگزیب نے مجھ پر ملکی خزانے کو ذاتی کاروبار بنانے اور براڈ شیٹ سے 50 فیصد کمیشن لینے کی کوشش کا الزام لگایا، مریم اورنگزیب کا بیان جھوٹا اور بے بنیاد ہے، براڈ شیٹ کے سی ای او کئی بار بتا چکے ہیں کہ شہزاد اکبر دیانت دار آدمی ہیں۔

انہوں نے نوٹس میں کہا تھا کہ مریم اورنگزیب نے موجودہ اینٹی کرپشن مہم کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کی، انہوں نے جھوٹے بیانات دے کر عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کی ، وہ ہرجانہ نوٹس کی 20 لاکھ روپے لیگل فیس بھی ادا کریں، اگر معافی نہیں مانگی اور ہرجانہ نہ بھرا تو قانونی کارروائی کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں