The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کرپشن پرنااہل ہوئے، ریلی ناکام رہی، شیخ رشید، فواد چوہدری

اسلام آباد: نواز شریف کی تقریر پر پی ٹی آئی، عوامی تحریک اور شیخ رشید نے ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ نواز شریف محض اقامے پر نہیں اربوں روپے کی کرپشن پر نااہل ہوئے، سپریم کورٹ کی کارروائی قوم کے سامنے ہے۔

نواز شریف کے ریلی سے خطاب کے بعد اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا کہ محمد خان جونیجو کو انہوں نے نکالا، بے نظیر بھٹو کو دو بار انہوں نے نکالا۔

، یہ لوگ جھوٹ بولتے ہیں، انہوں نے چار سال میں 35 ارب ڈالر قرضہ لیا، جب کہ 70سال میں 40 ارب ڈالر قرضہ لیا گیا اور اب موجودہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی ایل این جی کے اسکینڈل میں ملوث ہے۔

شیخ رشید نے کہا کہ جس دن نواز شریف نے سچ بولا وہ ان کی سیاست کا آخری سال ہوگا، ہمارے کالج اور اسپتال اور سڑکیں اسی طرح پڑی ہیں پنڈی میں ترقی نہیں ہوئی اسی لیے پنڈی کی ریلی ناکام ہوئی۔

انہوں نے نوازشریف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میاں صاحب آپ پر اربوں ڈالر کی کرپشن ہے، آپ پرکرپشن کے19 کیسز ہیں اور آپ اپنے وزیر خزانہ کے لیے منی لانڈرنگ کرتے رہے ہیں، یہ معاملہ صرف اقامہ کا نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ آپ چور دروازے سے مذاکرات بھی کررہے ہیں، بھیک بھی مانگ رہے ہیں اور کمزور عوامی طاقت کا مظاہرہ کررہے ہیں، آج بھی پنڈی میں چار بار بجلی کی لوڈ شیڈنگ ہوئی، یہ کون سی ترقی ہے؟

سربراہ عوا می مسلم لیگ نے کہا کہ 13 اگست کو لیاقت باغ کے جلسے میں نواز شریف کا پوسٹ مارٹم کریں گے، نواز شریف کا یہ سارا عمل فوج اور عدلیہ کو دباؤ کا شکار کرنے کے لیے ہے۔

ریلی ناکام رہی، اس میں لوگ ہی نہیں آئے، فواد چوہدری

اے آر وائی نیوز سے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان فواد چوہدری نے پنڈی اور پوٹھو ہار کے لوگوں کو مبارک باد دی اور کہا کہ وہ لوگ آئین کے ساتھ کھڑے رہے اور ریلی میں نہیں گئے۔

ریلی ناکام رہی، اس میں لوگ ہی نہیں آئے، کامیاب تو کیا خاک ہوئے، لوگوں کو مقدمے کی ایک ایک حقیقت کا پتا ہے یہ عوام کو بے وقوف نہیں بناسکتے۔

ایک سوال کے جواب میں فواد چوہدری نے کہا کہ نواز شریف کچھ بھی کہہ سکتے ہیں لیکن لوگ جانتے ہیں، فیصلہ لوگوں کے سامنے آیا ہے، مقدمہ سب کے سامنے چلا ہے کہ نواز شریف کرپشن پر نکالے گئے ہیں، لوگ اتنے پاگل نہیں ہیں کہ وہ یقین کرلیں کہ نواز شریف کرپشن پر نہیں نکالے گئے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایسی تقریر کا مقصد احتساب کیسز سے سپریم کورٹ کی نگرانی ہٹوانا ہے، لیکن یہ ممکن نہیں ہے، عدلیہ کی نگرانی جاری رہے گی، چار ستمبر کو ریفرنس دائر کرنے کی جو تاریخ ہے اس پر ریفرنسز دائر ہوں گے اور انہیں سزا ملے گی۔

انہوں نے کہا کہ لوٹا گیا پیسہ ملک میں واپس آنا چاہئیے، برآمدگی کے معاملے پر بھی پی ٹی آئی نظر رکھے گی، وہ صبح اٹھتے ہیں یا رات کو سوتے ہیں تو انہیں عمران خان یاد آتا ہے۔

وہ تنہا شخص ہے جس نے یہ معاملہ اٹھایا ورنہ لوگ تو کرپشن کو بھول چکے تھے، عمران خان نے ہی انہیں یاد دلایا، اب پیسہ نکلوانے کا عمل بھی عمران خان ہی مکمل کرائیں گے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ آئی ایس آئی کی ن لیگ کو فنڈنگ کاکیس بھی ابھی بھی سپریم کورٹ میں پڑا ہوا ہے، کس طرح آئی ایس آئی نے رقومات کے ذریعے ن لیگ کو جتوایا، بعد کے معاملات میں بھی ن لیگ نے دھاندلی کی، ایک بھی ایسا الیکشن نہیں جس میں شفاف طریقے سے یہ لوگ برسر اقتدار آئے ہوں، اب ان کی واپسی کا دور شروع ہوگیا، اب ان کے نوٹ اور بوٹ نہیں چل رہے۔

پہلی بار پاکستان میں چور اور سپاہی مل کر نہیں کھیلے، 60 دنوں میں سب کچھا چٹھا سامنے آگیا، اب مزید تحقیقات ہوجائیں تو کیا کچھ سامنے آجائےگا، اصل میں ن لیگ کا مقصد اب پیسے کی برآمدگی اور واپسی کو روکنا ہے لیکن پی ٹی آئی کا اب اگلا ہدف پیسے کی وطن واپسی ہے۔

علاوہ ازیں اے آر وائی سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان عوامی تحریک کے رہنما نور اللہ صدیقی نے کہا کہ تین بار وزیراعظم بننے والا شخص اس قدر ڈھٹائی سے جھوٹ بولے تو بہت افسوس ہوتا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں