The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف سمجھتے ہیں فوج ان کی راہ میں رکاوٹ ہے، شیخ رشید

اسلام آباد : عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ رینجرز کی تعیناتی کے معاملے کو بلاوجہ ایشو بنایا جارہا ہے، نواز شریف کے ذہن میں یہ بات ہے کہ پاک فوج ان کے راستے میں رکاوٹ ہے۔

یہ بات انہوں نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہی، شیخ رشید نے کہا کہ احسن اقبال کوروکا توان کی شان میں خلل پڑگیا، یہ منہ اور مسورکی دال، ملک بھر میں سیکیورٹی الرٹ ہے، احتساب عدالت میں شرارت ہوسکتی ہے، رینجرزکی تعیناتی کے معاملے کو بلاوجہ ایشو بنایا جارہا ہے۔

اسپیشل کور کمانڈرز کانفرنس کا اعلامیہ جاری نہ کرنے کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ خاموشی کے ذریعے بہت بڑی بات کی گئی ہے۔

شیخ رشید نے مزید کہا کہ نوازشریف غیرملکی ایجنڈے اور پاک فوج کو پنجاب پولیس بنانے پر کام کررہے ہیں، وہ ملک کی معیشت کوتباہ کرنے پر تلے ہوئے ہیں، نوازشریف کےذہن میں یہ بات ہے کہ فوج ان کے راستےمیں رکاوٹ بنی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو ہرسطح پر کمزور کرنے کی سازش کی جارہی ہے، ساری صورتحال کے ماسٹرمائنڈ نوازشریف ہیں، یہ لوگ بے نقاب ہوگئےہیں اس لیے ان کو جےآئی ٹی اچھی نہیں لگتی کیونکہ جے آئی ٹی میں ان کا پوسٹ مارٹم جو ہوگیا ہے۔

شیخ رشید نے کہا کہ یہ تو مجھے طعنے دیتے تھے اور خود ان پر اسمبلی کے دروازے بند ہوگئے، ان کی کوشش ہے کہ اپنی مرضی کا چیئرمین نیب اورمرضی کی عبوری حکومت لے آئیں، نظرثانی اپیل مسترد ہوئی پھر بھی اسمبلی کے زور پر ترمیم کرا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ختم نبوت سے متعلق میں نے بات کی تو یہ لوگ مارنے چڑھ دوڑے اوربعد میں انہوں نے اس کی خود تصحیح کی، کیا نواز شریف کی مرضی کے بغیر ختم نبوت سے متعلق ترمیم ہوئی؟

شیخ رشید نے مزید کہا کہ ناموس رسالت کے خلاف ووٹ دینے والوں کے ساتھ وہ ہوگا جو یاد رکھا جائے گا، پاک فوج اسلام کی فوج ہے، ناموس رسالت کی حفاظت فوج کرے گی، عوام پاک فوج اورعدلیہ کےساتھ ہے، وقت آنے پرعوام اپنا کردارادا کرےگی۔

ان کا کہنا تھا کہ غیرملکی پیسوں کے ذریعےاشتعال پھیلانے والوں کو روکنا چاہیے، اس وقت مین پلیئرنوازشریف ہیں جو منفی بیانات دے رہے ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں