site
stats
سندھ

شرجیل میمن کو بغیروارنٹ گرفتار کیا گیا، ناصر حسین شاہ

sharjeel

کراچی : سندھ کے وزیراطلاعات ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ کسی کے پاس شرجیل میمن کی گرفتاری کے وارنٹ نہیں تھے، دکھ ہوتا ہے کہ صرف پیپلزپارٹی کے ساتھ ہی ایسا رویہ کیوں رکھا جاتا ہے؟ چیئرمین نیب اس دہرے معیارکا نوٹس لیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، ناصر حسین شاہ کا کہنا تھا کہ کچھ دن پہلے کیپٹن (ر) صفدر کو کسی نے نہیں روکا، سابق وزیر اعظم کے داماد کو بڑے شاہانہ انداز سے پروٹوکول دیا گیا۔

شرجیل میمن کوعدالت سے گرفتار کیا گیا جبکہ ان پر ابھی صرف الزامات ہیں، ثابت کچھ نہیں ہوا، انہوں نے سوال کیا کہ کیا شرجیل میمن کو گرفتار کرنے والوں کے پاس کیا گرفتاری کے وارنٹ تھے؟

ناصرشاہ کا مزید کہنا تھا کہ سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی اور راجہ پرویزاشرف کا نام آج بھی ای سی ایل میں ہے، عوام جانتے ہیں کہ پیپلزپارٹی کے ساتھ کس طرح کارویہ رکھا جارہا ہے،شرجیل میمن کے عدالت میں چھ گھنٹےتک رکنے پرمن گھڑت باتیں کی گئیں، ملک میں احتساب کا دہرا معیار ہے۔


مزید پڑھیں: کرپشن کیس، شرجیل میمن جوڈیشل ریمانڈ پر جیل روانہ


وزیراطلاعات سندھ نے کہا کہ نئے چیئرمین نیب سے ہم پرامید ہیں، جسٹس (ر) جاوید اقبال سے مطالبہ ہے کہ اس دہرے معیارکا نوٹس لے کر نیب سندھ کی جانب سے کی گئی شرجیل میمن کےخلاف کارروائی پرایکشن لیں، انہوں نے کہا کہ دیگرصوبوں میں بھی اربوں روپے کے اشتہارات ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top