The news is by your side.

Advertisement

پی ایس ایل اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل ، کرکٹر شرجیل خان پر 5سال کی پابندی عائد

لاہور : پی ایس ایل اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل میں کرکٹر شرجیل خان پر 5سال کی پابندی عائد کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق اینٹی کرپشن ٹریبونل نے پاکستان سپر لیگ کے اسپاٹ فکسنگ کیس میں شرجیل خان کے خلاف فیصلہ سنادیا اور الزامات ثابت ہونے پر کرکٹر پر 5سال کی پابندی عائد کردی جبکہ وہ ڈھائی سال معطل رہیں گے۔

وکیل شرجیل خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اینٹی کرپشن ٹریبونل کےفیصلےکےخلاف اپیل کریں گے، شرجیل خان پرکوئی جرمانہ نہیں لگایاگیا، اینٹی کرپشن ٹریبونل کے فیصلے پر تحفظات ہیں،ید کے بعد فیصلے کی تفصیلی کاپی ملے گی ، فیصلے سے اختلاف ہے۔

یاد رہے کہ تین رکنی ٹربیونل نے پانچ ماہ تک کاروائی کی، شرجیل کی جانب سے اسلام آباد یونائیٹیڈ کے کوچ ڈین جونز، محمد یوسف اور صادق محمد پیش ہوئے جبکہ آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کے رونی فلینی گن اور لاہور قلندر کے عاقب جاوید نے بھی گواہی دی۔

قانونی ماہرین کی نظر میں شرجیل نے خود کو جرح کے لئے پیش نہ کرکے سنگین غلطی کی۔

خیال رہے کہ کرکٹر شرجیل خان پر پی ایس ایل 2 میں فکسنگ کا الزام تھا کہ شرجیل خان نے میچ میں رقم کے عوض2 ڈاٹ بالز کھیلی۔


مزید پڑھیں : اسپاٹ فکسنگ کیس: محمد عرفان نے بکیز سے رابطوں کا اعتراف کرلیا


اس سے قبل پاکستان کرکٹ بورڈ نے اسپاٹ فکسنگ کے جرم میں فاسٹ بولر محمد عرفان کوپہلے ہی معطل کرچکا ہے، محمد عرفان نے پی سی بی اینٹی کرپشن یونٹ کو بیان ریکارڈ کرواتے ہوئے بکیز سے رابطوں کا اعتراف کیا تھا۔

پی سی بی نے پی ایس ایل کی ٹیم اسلام آباد یونانیٹڈ کے دو کھلاڑیوں شرجیل خان اور خالد لطیف کو اسپاٹ فکسنگ کے الزام میں معطل کرتے ہوئے ایونٹ سے باہر کردیا تھا، کھلاڑیوں نے اعتراف جرم بھی کرلیا جس کے بعد انہیں دبئی سے کراچی واپس بھیج دیا گیا تھا۔

بعدازاں شاہ زیب حسن اور محمد عرفان کے بھی بکیز سے رابطے سامنے آئے اور تحقیقات کا دائرہ کار بڑھا دیا گیا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں