The news is by your side.

Advertisement

شرجیل خان اورخالد لطیف کی اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیشی

لاہور : پی ایس ایل میں اسپاٹ فکسنگ میں ملوث شرجیل خان اورخالد لطیف لاہور میں اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوئے، دونوں کھلاڑیوں سے یونٹ کےسربراہ کرنل ریٹائرڈ اعظم نےبیان لیا، دونوں کھلاڑیوں کو میڈیا سے چھپا کر نیشنل کرکٹ اکیڈمی لایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ میں اسپاٹ فکسنگ کے الزام میں معطل ہونے والے کرکٹرز شرجیل خان اور خالد لطیف لاہور میں اینٹی کرپشن یونٹ کے سامنے پیش ہوئے۔ پی سی بی اینٹی کرپشن یونٹ کےسربراہ کرنل ریٹائرڈ اعظم نےبیان لیا۔

قوی امکان ہے کہ دونوں کھلاڑیوں پر چارج شیٹ دے کر باضابطہ فرد جرم عائد کیے جانے کا امکان ہے۔ جب کہ کھلاڑیوں کو وکیل سے مشاورت کے بعد اپنا مؤقف دینے کا حق بھی حاصل ہو گا۔

اس سے قبل دونوں کھلاڑیوں کو چھپا کر نیشنل کرکٹ اکیڈمی لایا گیا۔ قذافی اسٹیڈیم میں شرجیل خان اور خالد لطیف کی آمد کے موقع پر گارڈز نے میڈ یا کے نمائندوں کو کوریج سے روکا اورایک گاڑی کو قذافی اسٹیڈیم سے باہر بھیجا تو مین گیٹ کا دروازہ ٹوٹ گیا،اس پر پاکستان کرکٹ بورڈ نے میڈیا کے قذافی اسٹیڈیم داخلے پر پابندی عائد کردی۔

 ترجمان پی سی بی کے مطابق پیشی کی تفصیلات منظر عام پر نہیں لائی جائے گی۔ بورڈ پہلے ہی دونوں کھلاڑیوں کو شوکاز جاری کرچکا ہے۔ دونوں کھلاڑی ابھی معطل ہیں۔

الزام ثابت ہونے پر تاحیات پابندی بھی لگ سکتی ہے۔ ترجمان کے مطابق اسلام آباد یونائیٹڈ کے تیسرے کھلاڑی فاسٹ بولر محمد عرفان کو بورڈ نے ابھی کلین چٹ نہیں دی ہے ان کے خلاف تحقیقات تاحال جاری ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں