The news is by your side.

Advertisement

سابق صوبائی وزیر شرجیل میمن کی ضمانت منظور

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی ہائیکورٹ نے سابق صوبائی وزیر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما شرجیل انعام میمن کی ضمانت قبل از گرفتاری کی عبوری درخواست منظور کرلی۔

تفصیلات کے مطابق سابق صوبائی وزیر شرجیل میمن نے سندھ روشن پروگرام کے تحت سولر لائٹس کی تنصیب کے منصوبے کا ٹھیکہ دینے میں مبینہ کرپشن کے کیس میں درخواست ضمانت دائر کر رکھی تھی۔

درخواست کی سماعت چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس لبنیٰ سلیم پر مشتمل 2 رکنی ڈویژن بینچ نے کی، عدالت نے شرجیل میمن کی یکم جنوری تک عبوری ضمانت منظور کرتے ہوئے قومی احتساب بیورو (نیب) سے جواب طلب کرلیا۔

عدالت نے شرجیل میمن کو 5 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کروانے کا حکم بھی دیا۔

نیب کی مذکورہ انکوائری میں سابق وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ بھی عبوری ضمانت پر ہیں جبکہ 4 ملزمان اور 2 کمپنیاں 29 کروڑ روپے میں پلی بارگین کر چکی ہیں۔

خیال رہے کہ شرجیل میمن اس سے قبل سرکاری خزانے سے پونے 6 ارب روپے کی خرد برد کے الزام پر بھی نیب کی زیر حراست رہ چکے ہیں۔

شرجیل انعام میمن پر الزام ہے کہ انہوں نے مذکورہ رقم صوبائی حکومت کی جانب سے الیکٹرونک میڈیا کو دیے جانے والے اشتہارات کی مد میں کی جانے والے کرپشن کے دوران خرد برد کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں