site
stats
پاکستان

شرجیل میمن نے وزارتِ بلدیات میں کرپشن کا پردہ فاش کردیا

کراچی: پیپلز پارٹی کے رہنما اورسابق وزیرِ بلدیات سندھ شرجیل انعام میمن نے وزارتِ بلدیات میں کروڑوں روپے کی کرپشن کا پردہ فاش کردیا۔

اے آروائی نیوز کے پروگرام الیونتھ آور میں گفتگو کرتے ہوئے شرجیل انعام میمن نے کہا کہ ان سے قبل وزیرِ بلدیات ماہانہ دس کروڑ روپے لیتا تھا۔

انہوں نے کہا کہ کراچی میں شادی ہالوں پرایک جماعت کا قبضہ ہے، سابق ناظم مصطفیٰ کمال کے دورمیں غیر قانونی ہال تعمیرکئے گئے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ انہوں نے جب وزارتِ بلدیات سنبھالی تو سب سے زیادہ کرپشن ٹی ایم اوز میں تھی۔

شرجیل میمن کا کہناتھا کہ سابق صدرپرویزمشرف کے دورمیں کراچی میں ٹارگٹ کلنگ پیپلز پارٹی کے دورِ حکومت سے زیادہ رہی اورپیپلزپارٹی کے دور میں بہت سے واقعات کے مجرم پکڑے گئے ہیں۔

انہوں نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ ڈاکٹرعاصم کی گرفتاری کےوقت وہ پاکستان میں تھے اس کے دو دن بعد باہرآئے۔

انکا یہ بھی کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کو ہمیشہ سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا ہے، ذوالفقارعلی بھٹو سے لے کرآج تک قائم ہونے والے تمام مقدمات سیاسی نوعیت کے ہیں، دومرتبہ بینظیربھٹو کی حکومت گرائی گئی۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہمارے دورمیں نوازشریف نے کرپشن کے تمام کیسزپراسٹے آرڈرلے رکھا تھا اورحکومت میں آتے ہی تمام کیسزسے بری ہوگئے۔

شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ کراچی آپریشن پر ایم کیو ایم کے تحفظات لایعنی ہیں جہاں بھی سزا یافتہ افراد موجود ہیں وہاں چھاپہ ہونا چاہیئے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top