The news is by your side.

Advertisement

شرمین عبید چنائے کی دستاویزی فلم نے ایک اور بڑا اعزاز اپنے نام کرلیا

نیویارک : فلم ساز شرمین عبید چنائے کی ڈاکیو منٹری”اے گرل ان دی ریور” نے رابرٹ کینیڈی جرنلزم ایوارڈ اپنے نام کرلیا۔

فلم ساز شرمین عبید چنائے کی ڈاکیومنٹری فلم “اے گرل ان دی ریور” نے آسکر کے بعد ایک اور بڑا اعزاز اپنے نام کر لیا، فلم کو رابرٹ کینیڈی جرنلزم ایوارڈ سے نوازا گیا، دستاویزی فلم صبا نامی اٹھارہ سالہ لڑکی کی کہانی ہے۔ جسے اس کے رشتے داروں نے غیرت کے نام پر قتل کرنے کی کوشش کی، بعد میں مردہ سمجھ کر دریا میں پھینک دیا تھا۔
مگر وہ معجزانہ طور پر بچ گئی تھی۔

زندہ بچنے کے بعد اس نے اسپتال کے ڈاکٹروں اور پولیس کے ساتھ مل کر اپنا مقدمہ لڑا مگر پھر دباؤ میں آ کر حملہ آوروں کو معاف کر دیا تھا۔


مزید پڑھیں : شرمین عبید کی فلم ایک اور ایوارڈ کے لیے نامزد


اس فلم کو گزشتہ سال آسکر ایوارڈ بھی مل چکا ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ ماہ فلم ساز شرمین عبید چنائے کی غیرت کے نام پر قتل کے موضوع پر بنائی جانے والی دستاویزی فلم ’اے گرل ان دی ریور‘ کوا مریکی پیباڈی ایوارڈز کے لیے بھی نامزد کیا گیا تھا۔

شرمین عبید چنائے کا شمار ان نو خواتین ہدایت کاروں میں ہوتا ہے، جنھوں نے نان فکشن میں آسکر ایوارڈ حاصل کیے ہوں۔


مزید پڑھیں : اے گرل ان دی ریور: شرمین عبید چنائے دوسرا آسکرجیتنے میں کامیاب


شرمین عبید چنائے کا شمار ان نو خواتین ہدایت کاروں میں ہوتا ہے، جنھوں نے نان فکشن میں آسکر ایوارڈ حاصل کیے ہوں۔

خیال رہے کہ رابرٹ کینیڈی ایوارڈ کا آغاز 1968 میں ہوا تھا جس میں سماجی بہتری اور اہمیت کے مختلف پہلوؤں کو اجاگر کرنے کے لیے 12 کیٹیگریز میں اعزازت دیے جاتے ہیں۔

رابرٹ کینیڈی ایوارڈ کی تقریب 23 مئی کو واشنگٹن میں منعقد کی جائے گی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں