The news is by your side.

Advertisement

‏’روپے کی قدر گرتی ہے تو گھبرانےکی ضرورت نہیں‘‏

مشیرخزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ ڈالرکی حقیقی قدراس وقت166روپے کے قریب ہے ڈالر کی قدرکم کرنے ‏کیلئے مہنگائی کی شرح کم کرنا ہوگی عالمی سطح پرمہنگائی ہوئی ہےتوپاکستان میں بھی مہنگائی ہوئی ہے۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام آف دی ریکارڈ میں گفتگو کرتے ہوئے شوکت ترین نے کہا کہ اس وقت پاکستان ‏گروتھ زون میں جاچکا ہے 5فیصدتک گروتھ جائےگی تومڈل کلاس طبقہ بھی مستفید ہو گا سندھ کےعلاوہ دیگر ‏صوبوں میں آٹےکی قیمتوں میں کمی ہے۔ ‏

مشیرخزانہ نے کہا کہ آئی ایم ایف کی شرط کی وجہ سےبجلی کی قیمت کم بڑھائیں گے اور پٹرول لیوی کی مد ‏میں ٹیکس میں کمی کررہےہیں، گزشتہ6ماہ میں ہم مسلسل ٹیکسز میں کمی کر رہےہیں۔

انہوں نے کہا کہ عالمی سطح پرچیزیں مہنگی ہورہی ہے جسےعوام کوپاس کرناہوگا اب وہ وقت آگیا ہےکہ عالمی ‏مہنگائی کوعوام کوپاس آن کرنا ہو گی، پٹرول کی قیمتیں بڑھ رہی ہیں جسےعوام کو پاس کر رہےہیں ‏ہوسکتاہےآئندہ دنوں میں پٹرول کی قیمتیں گرناشروع ہوجائیں اگر پٹرول کی قیمتیں گریں گی توہم بھی پاکستان ‏میں قیمت کم کریں گے۔

شوکت ترین نے کہا کہ جو بھی اقدامات اٹھا رہےہیں مہنگائی کم کرنےکیلئےاٹھا رہے ہیں پٹرول کی قیمت ‏بڑھانا ہماری مجبوری ہے کیونکہ درآمدکرتےہیں، پیٹرولیم لیوی کم کرکے450ارب روپے کا بوجھ اٹھایا پیٹرولیم ‏لیوی 30 روپے سے کم کرکےساڑھےپانچ روپے کردی۔ ‏

ان کا کہنا تھا کہ ڈالر کو مصنوعی سہارےپررکھیں گےتوہماری پروڈکٹ ڈی ویلیو ہوں گی ڈالرکومصنوعی سہارے ‏پر رکھیں گے تو درآمدات میں اضافہ ہوگا ڈالرکےمصنوعی سہارےپررکھنےسےایکسپورٹ کم ہوں گی، مصنوعی طور ‏پر روپیہ مضبوط کرنےسےبرآمدات پرمنفی اثرپڑتاہے روپےکی قدراسی جگہ رکھنی چاہیےجہاں اس کی ضرورت ہے ‏روپے کی قدر گرتی ہےتو اس پرگھبرانےکی ضرورت نہیں ہے ڈالرکی حقیقی قدراس وقت166روپے کے قریب ہے ڈالر ‏کی قدرکم کرنے کیلئے مہنگائی کی شرح کم کرنا ہوگی عالمی سطح پرمہنگائی ہوئی ہےتوپاکستان میں بھی ‏مہنگائی ہوئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں