The news is by your side.

Advertisement

پنجاب پاور کمپنی اسکینڈل: شہبازشریف نے نیب میں طلبی کا نوٹس ہوا میں اڑا دیا

لاہور: پنجاب پاور کمپنی اسکینڈل سے متعلق شہبازشریف نے نیب میں طلبی کا نوٹس ہوا میں اڑا دیا جبکہ لیگی رہنما امیر مقام بھی قومی احتساب بیورو کے ریڈار پر آگئے۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو آج نیب لاہور میں پیش ہونا تھا جہاں ان سے پنجاب پاور کمپنی اسکینڈل سے متعلق سوالات ہونے تھے تاہم وہ پیش نہیں ہوئے، سابق وزیر اعلیٰ پر بے ضابطگیوں اور میرٹ کے بغیر بھرتیوں کا الزام ہے۔

دوسری جانب ن لیگ خیبر پختونخواہ کے صدر امیر مقام کے گرد بھی نیب کا گھیرا تنگ ہونے لگا، احتساب بیورو نے انیس جولائی کو طلب کر لیا، ان پر آمدن سے زائد اثاثوں کا الزام ہے۔

قبل ازیں شہباز شریف نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہمیں ڈرانے والے یاد رکھیں وقت کبھی بھی ایک جیسا نہیں رہتا۔


پنجاب پاور کمپنی کرپشن اسکینڈل، شہباز شریف کی آج نیب لاہور میں طلبی


اس سے قبل پنجاب کمپنیز اسکینڈل میں چار جولائی کو بھی شہبازشریف نیب لاہور آفس میں پیشی بھگت چکے ہیں، دو گھنٹے کے سوال جواب کے باوجود نیب کو مطمئن نہیں کر سکے تھے۔

نیب عدالت میں پیشی کے موقع پر داماد سے متعلق سوال پر برہم ہوگئے تھے، ان کا کہنا تھا کہ کسی افسر نے میرے رشتے دار کو خود شامل کیا تو میں نہیں جانتا۔

شہبازشریف کو آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم میں کرپشن کے الزامات پر بھی طلب کیا گیا تھا، 22 جنوری کو چھوٹے میاں صاحب نیب لاہور میں ڈیڑھ گھنٹہ پیش ہوئے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں