پوری کوشش ہے معاملے کو افہام و تفہیم سے حل کریں، وزیرِ مملکت برائے داخلہ -
The news is by your side.

Advertisement

پوری کوشش ہے معاملے کو افہام و تفہیم سے حل کریں، وزیرِ مملکت برائے داخلہ

اسلام آباد: وزیرِ مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ملک میں پیدا ہونے والی صورتِ حال پر کہا ہے کہ پوری کوشش ہے معاملے کو افہام و تفہیم سے حل کریں۔

شہریار آفریدی نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج رات تک معاملات حل ہوجائیں گے، قانون ہاتھ میں لینے والے کچھ لوگ گرفتار ہوئے ہیں، پوری کوشش ہے معاملے کو افہام و تفہیم سے حل کریں۔

موبائل سروس کی بند ش سے متعلق کسی معاملے کا علم نہیں: شہریار آفریدی

وزیر مملکت نے کہا کہ موبائل سروس کی بند ش سے متعلق کسی معاملے کا علم نہیں، میرے دستخط کے بغیر کوئی اقدام نہیں کیا جائے گا، کچھ ریاستی امور ایسے ہیں جن پر وقت سے پہلے بات کرنا مناسب نہیں۔

انھوں نے کہا کہ دھرنے کی قیادت نے ہم سے رابطہ کیا ہے، بات چیت ہوئی ہے، دھرنے کی قیادت نے کمیٹی کو کچھ مطالبات دیے ہیں، عوام اور ملک کے لیے جو بہتر ہوگا ریاست وہ کردار ادا کرے گی۔


یہ بھی پڑھیں:  کشیدہ صورت حال، ملک کے مختلف شہروں میں اسکول بند رکھنے کا اعلان


شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور اس کے ادارے دینی معاملات پر سمجھوتہ نہیں کریں گے، وزیرِ اعظم نے واضح پیغام دیا ہے کہ ریاست کو ڈکٹیٹ نہیں کیا جا سکتا، آسیہ بی بی کا نام ای سی ایل میں ڈالنے جیسی کوئی بات سامنے نہیں آئی۔

وزیرِ مملکت نے کہا کہ اقلیتی برادری بھی اتنی ہی عزت رکھتی ہے جتنے دیگر شہریوں کی ہے، عمران خان کے وزیرِ اعظم بننے کے بعد یورپ میں سوچ بدلی ہے، حکومت نے ہی ہالینڈ کے گستاخانہ خاکوں کے معاملے کے خلاف آواز اٹھائی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں