The news is by your side.

Advertisement

ریلوے میں 23 ہزار نوکریوں کی ضرورت ہے: وزیر ریلوے

لاہور: وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا ہے کہ ریلوے میں 23 ہزار نوکریوں کی ضرورت ہے جبکہ فوری طور پر 10 ہزار نوکریوں کی ضرورت ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ریلوے میں ایمرجنسی کے حالات ہیں، افرادی قوت کی کمی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ریلوے میں 23 ہزار نوکریوں کی ضرورت ہے جبکہ فوری طور پر 10 ہزار نوکریوں کی ضرورت ہے۔ گولڑہ ریلوے اسٹیشن اور میوزیم کے لیے لوگ آئیں اور سرمایہ کاری کریں۔

انہوں نے کہا کہ 15 اکتوبر سے ریلوے اسٹیشن پر صاف پانی کا ٹینڈر کھول رہے ہیں، ریلوے ٹریکنگ اور وائی فائی سے متعلق لوگ کام کر رہے ہیں۔ ریلوے کے بکنگ آفس رات 12 بجے تک کھلے رہیں گے۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ٹرینوں میں وائی فائی کی سہولت جلد فراہم کریں گے۔ ایم ایل ون اور ٹو ریلوے کی بہتری کے لیے بہترین منصوبے ہیں، ایم ایل ون یا ٹو پر فوری کام شروع ہونے جا رہا ہے۔ یہ سی پیک میں بھی اہم منصوبہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ ٹرینوں کی تعداد 100 دنوں میں 10 سے 15 پر لے کر جائیں گے، ٹرینوں کی تعداد بڑھانے سے متعلق معاہدے ہوگئے ہیں۔ 30 ستمبر تک ٹرینوں کی تعداد 10 سے بڑھ کر 15 ہوجائے گی۔

وفاقی وزیر ریلوے کا مزید کہنا تھا کہ سرمایہ کاروں کو ویلکم کرتے ہیں کہیں بھی سرمایہ کاری کر سکتے ہیں، خوشحال خان ایکسپریس کے حادثے سے متعلق رپورٹ طلب کی ہے۔ حادثے سے متعلق 30 ستمبر تک رپورٹ دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ فریٹ کی تعداد 100 دنوں میں 10 سے 15 پر لے کر جائیں گے، فریٹ کی تعداد بڑھانے سے متعلق معاہدے ہو گئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ریلوے ہیڈ کوارٹرز کراچی منتقل کر رہے ہیں، ریلوے میں سرمایہ کاری بڑھانے کے لیے مانیٹرنگ کمیٹی بنا دی ہے۔ اس وقت ریلوے کا خسارہ 38 ارب روپے ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں