The news is by your side.

Advertisement

آرمی چیف 3 سال پورے کریں گے، شیخ رشید

ن لیگ کی مریم نواز کو باہربھیجنے کی خواہش پوری نہیں ہوگی

لاہور : وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا کہ 6ماہ کو 3سال ہی سمجھیں ، آرمی چیف تین سال پورے کریں گے، فیصلہ کچھ اور آتا تو اس کےلئے بھی تیار تھے، قانون میں سقم ہے ،غلطیوں کو دور کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے سپریم کورٹ کی جانب سے آرمی چیف کی مدمت ملازمت میں 6 ماہ کی توسیع کے فیصلے کے حوالے سے کہا 6ماہ کو 3سال ہی سمجھیں، کسی نے پہلےتوسیع کوچیلنج نہیں کیا اس لئے کوتاہیاں ہوئیں۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ کہہ سکتا ہوں کہ معاملے پر مسلم لیگ(ن) آن بورڈ ہے، قمرزمان کائرہ اچھے ساتھی ہیں مگر خواب دیکھنےپر پابندی نہیں، آرمی چیف تین سال پورے کریں گے۔

وفاقی وزیر ریلوے نے مزید کہا کہ قانون میں سقم ہے ، غلطیوں کو دور کریں گے، آرمی چیف کی غلطی نہیں ،ہم نے کاغذات پورے تیار نہیں کئے تھے، فیصلہ کچھ اور آتا تو اس کےلئے بھی تیار تھے۔

مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ جنہیں باہرجانا تھا وہ باہر چلے گئے ، ن لیگ کی مریم نواز کو باہربھیجنے کی خواہش پوری نہیں ہوگی ، ن لیگ کیوں ووٹ نہیں دے گی یہ ہاتھ جوڑ کر ووٹ دیں گے، پیپلزپارٹی نخرے دکھائےگی مگر کسی کے نخرے نہیں اٹھائیں گے، پروڈکشن آرڈر معمولی بات ہے جاری نہ بھی ہوں تو فرق نہیں پڑتا۔

شیخ رشید نے کہا 6 ماہ کےساتھ ڈھائی سال لگالیےجائیں ، سب کچھ ٹھیک ہے اور 6 ماہ کا مطلب 3 سال ہیں، فروغ نسیم پر جو سارا ملبہ ڈالا جارہا ہے وہ غلط ہے۔

مزید پڑھیں :  سپریم کورٹ نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں 6ماہ کی توسیع کردی

یاد رہےسپریم کورٹ نے مختصر فیصلہ میں آرمی چیف کی مدت ملازمت میں 6ماہ کی توسیع کرتے ہوئے حکومت کا نوٹیفکیشن مشروط طور پر منظور کرلیا اور کہا آرمی چیف جنرل قمر باجوہ اپنے عہدے پر برقرار رہیں گے۔

فیصلے میں کہا گیا آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع چیلنج کی گئی، حکومت نے یقین دلایا 6 ماہ میں اس معاملےپرقانون سازی ہوگی، حکومت نے 6ماہ میں قانون سازی کی تحریری یقین دہانی کرائی، 6 ماہ بعداس سلسلےمیں کی گئی قانون سازی کاجائزہ لیا جائے گا۔

سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ اس معاملے پرقانون سازی کرناپارلیمنٹ کااختیار ہے ، قانون سازی کے لئے معاملہ پارلیمنٹ بھیجا جائے، تحمل کا مظاہرہ کرکے معاملہ پارلیمنٹ پر چھوڑتے ہیں، پارلیمنٹ آرٹیکل 243 اور ملٹری ریگولیشن 255 کے سقم دور کرے۔

فیصلہ میں کہا گیا تحریری بیان کی بنیاد پر حکومت کا جاری نوٹیفکیشن درست قرار دیتےہیں، چیف آف آرمی اسٹاف قمر جاویدباجوہ اپنی ملازمت جاری رکھیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں