The news is by your side.

Advertisement

شہبازشریف، نواز شریف کو واپس لانے کے بجائے خود بھاگ رہے تھے، شیخ رشید

اسلام آباد : وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ شہبازشریف، نواز شریف کو واپس لانے کے بجائے خود بھاگ رہے تھے، اگرشہبازشریف باہر گئے تو واپس لانامشکل ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے گفتگو میں کہا کہ شہبازشریف کا نام ای سی ایل میں ڈال کر نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے ، ان کے باہر جانے سے کیس متاثر ہوتا، شریف خاندان کے 5 افراد پہلے ہی مفرور ہیں جبکہ 4 افراد شہباز شریف کیخلاف کیس میں وعدہ معاف گواہ بن چکے ہیں، جانے کی اجازت دی گئی تو سلطانی گواہ پریہ اثرانداز ہو سکتے ہیں۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ نوازشریف کوواپس لانے کے شہبازشریف ضمانتی ہیں، جس دن عدالت کافیصلہ ہوااسی دن شہبازشریف نے ٹکٹ بک کرایا ، انھوں نے عدالت میں پیش ہونے کی کوئی درخواست نہیں دی اور نہ ان کی جانب سے کوئی نمائندہ مقرر کیا گیا۔

وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ شہبازشریف کیخلاف 7ارب کےاثاثوں کاکیس ہے، اگر شہباز شریف باہر گئے تو واپس لانا مشکل ہوگا، نیب نے جو ریفرنس دیا کابینہ نےاس کی منظوری دی، وزیر قانون فروغ نسیم نے کیبنٹ کو سمری بھیجی اور منظوری ہوئی جبکہ وزات داخلہ نےاس کا نوٹی فکیشن جاری کردیاہے۔

ان کا کہنا تھا کہ شہبازشریف ،نوازشریف کوواپس لانےکے بجائےخودبھاگ رہےتھے، آرٹیکل 36کے تحت انصاف کا تقاضا ہے تمام ملزمان سےایک جیساسلوک ہو، ایک ملزم رات کے اندھیرے میں پاکستان سے بھاگ رہاتھا جبکہ شہباز شریف نےکوئی میڈیکل دستاویزات جمع نہیں کرائی۔

شیخ رشید نے مزید کہا کہ زبیر نامی ان کےترجمان کہتے ہیں کہ تعلقات اچھے ہوگئے، ہمیں خوشی ہے کہ آپ کےتعلقات اچھے ہوگئے تاہم میرے پاس کوئی اطلاعات نہیں کہ وہ ڈیل کے تحت باہرآئےیانہیں، جولیڈرہوتا ہے وہ اپنے لوگوں کیساتھ جینا اور مرنا چاہتا ہے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ شہبازشریف چاہیں تو 15دن کےاندر درخواست دےسکتےہیں، نوازشریف واپس نہیں آیا تو شہبازشریف نے کہاں سے آنا تھا، پاکستان چاہتاہے بے دخل کیا جائے اور برطانیہ چاہتا ہے کہ کیس داخل کیا جائے۔

انھوں نے کہا کہ عدالت کے فیصلوں پر تبصرہ نہیں کر سکتا ہوں، بے بس نہیں ہوئے کوششیں جاری ہیں مگرابھی نتیجہ نہیں نکلا، برطانوی سفیر میرے پاس آئے تھے ان سےبات ہوئی تھی۔

شیخ رشید کا مزید کہنا تھا کہ کوئی دھوکا نہیں کررہاعمران خان سمجھدارآدمی ہے، شایدسب لوگ چھٹی پر تھے لیکن عمران خان کام کررہا تھا، عمران خان اپوزیشن کے بس کا کھیل نہیں ہے، کوئی اختلاف نہیں خودجنرل باجوہ نے کھل کربات کی، جنرل باجوہ نے کہا فوج جمہوری اداروں ،منتخب حکومت کیساتھ کھڑی ہے، میٹنگ میں شہباز شریف اور بلاول بھی موجود تھے۔

اسرائیلی جارحیت کے حوالے سے وفاقی وزیر نے کہا کہ غزہ صورتحال پرعالم اسلام غمزدہ ہے امید ہے اسمبلی میں قرارداد لائی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں