The news is by your side.

Advertisement

جب بھی علما نے تحریک چلائی ملک میں مارشل لا لگا ہے، شیخ رشید

لاہور : وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا ہے کہ گاؤں کے سارے سیاسی چوہدری مرجائیں، مولانا کو اقتدار نہیں مل سکتا، اگر شب خون مارا گیا تو 400سے 600 لوگ اندر ہوں گے ، جب بھی علما نے تحریک چلائی ملک میں مارشل لا لگا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ملک میں سیاست زوروشورپرہے ، جمعیت علمائےاسلام نے ابھی تک دھرنےکی کوئی بات نہیں کی، دھرناابھی گرے لسٹ میں ہے۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ گاؤں کے سارے سیاسی چوہدری مر جائیں ، مولانا کو اقتدار نہیں مل سکتا، جن کے اشاروں پر مولانا کھیلنے جارہے ہیں، ان کی سیاست بھی تباہ ہوگی، دھرنا دھندلا ہوچکا ہے،فضل الرحمان کو فیس سیونگ دی جاسکتی ہے۔

وفاقی وزیر ریلوے نے کہا میری درخواست تاخیر سے سنی گئی لیکن عمران خان نے سنی، اس بار جمہوریت کوشب خون لگا تو فیصلے جلد ہوں گے، مولانا صاحب امریکیوں سے کہتے تھے مجھے لے کر آؤ، مولانا صاحب کہتے تھے وزیرستان میں ٹھیک کرکے دکھاؤں گا۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر شب خون مارا گیا تو 400 سے 600 لوگ اندر ہوں گے، شاید امریکا اقتدار دیتا ہے، پی ٹی آئی سمیت 36پارٹیوں نے فیصلہ کیا تھا الیکشن نہیں لڑیں گے، مولانا فضل الرحمان فیصلے کے باوجود انتخابات میں کود پڑے۔

اگر شب خون مارا گیا تو 400 سے 600 لوگ اندر ہوں گے

شیخ رشید نے کہا کہ دینی مدرسے ہماری آنکھ کے ستارے اور جھومر ہیں، مولانا ڈنڈا برداروں کو ایسے دکھا رہے ہیں، جیسے مدرسوں میں دہشت گرد تیار ہو رہے ہیں، یہ سیاستدان ایک این آر اوکی مار ہیں،عمران خان دینے کو تیارنہیں۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ختم نبوت کے قانون میں ردبدل ن لیگ دور میں ہوا،فضل الرحمان ووٹ دے چکی تھی، ختم نبوت کے مسئلے پر میں نے دھمکی دی کہ جمعہ کے دن تک واپس نہ لیا تو باہر نکلوں گا، ختم نبوت قانون کے مسئلے پر میں نے مولانا اور دیگر کو دوزخ کی آگ سے بچایا۔

ختم نبوت قانون کے مسئلے پر میں نے مولانا اور دیگر کو دوزخ کی آگ سے بچایا

انھوں نے مزید کہا کہ سب کو بتانا چاہتا ہوں نیشنل ایکشن پروگرام ان ایکشن ہے، کوئی سمجھتا ہے اسلام آباد پر چڑھائی سے مسئلے حل ہوں گے تو وہ عقل کا اندھا ہے، انڈیا کشمیر کی بجائے مولانافضل الرحمان کو کوریج دے رہا ہے، مولانا کو گولڈن ٹیمپل جانے کی توفیق ہوئی لیکن قائد کے مزار جانے کی نہیں۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ آرمی چیف اور وزیراعظم ایک ہی جمہوری گاڑی کےدوپہیےہیں، فضل الرحمان کےذریعے جمہوری گاڑی کو یہ ناکام کرنے کی کوشش کرنا چاہتے ہیں۔

نواز شریف، شہبازشریف اور آصف زرداری نے ملک کو لوٹا نہیں پاکستانی معیشت کو نوچا ہے

وزیر ریلوے نے کہا کہ شہبازشریف کہتے ہیں مہنگائی ہے، دوائیاں مہنگی ہوگئی ہیں، نواز شریف، شہبازشریف اور آصف زرداری نے ملک کو بے دردی سے لوٹا، انہوں نے لوٹا نہیں پاکستانی معیشت کو نوچا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے ایم ایل ون سے متعلق چینی صدر سے ہر موقع پر کہا، ایم ایل ون کامطلب یہ ہےکہ ہم نے 138ٹرینیں چلائیں، پہلے سال میں 16نئی ٹرینیں چلائیں،اب 20تک ٹرینیں چلاؤں گا، ایم ایل ون انقلاب کا نام ہے۔

جب بھی علما نے تحریک چلائی ملک میں مارشل لا لگا ہے

شیخ رشید نے کہا سیاست میں وقت کی بہت اہمیت ہوتی ہے، ملکی ادارے سیاسی انتشار اور خلفشار سے متعلق انتہائی فکر مند ہیں، جب بھی علما نے تحریک چلائی ملک میں مارشل لا لگا ہے، ابھی کوئی فیصلہ نہیں ہوا، دھند چھائی ہوئی ہے، سیاستدان عقل سے کام لیں، دنیا کی کوئی طاقت ملیٹنسی کو قبول کرنے کیلئے تیار نہیں۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ موبائل سے مذہبی رہنما کا نمبر نکلا تو امریکا نے جہاز سے اتار کر مجھے ڈی پورٹ کیا، اسلام آباد کی دھوپ میں دینی قوتوں کو خراب نہ کریں، آخری بات میں 26اکتوبر کو کروں گا، امید ہے معاملات 21سے 26 اکتوبر تک بہتر رخ اختیار کریں گے ، اگر معاملات ٹھیک نہ ہوئے تو نقصان نواز شریف، آصف زرداری کو ہوگا۔

دھرنے کا فائدہ نواز شریف اورآصف زرداری کو ہی پہنچنا ہے

انھوں نے کہا کہ تین سال میں ملکی اکانومی بہتر ہوجائے گی، چھتیس سال میں ملکی معیشت ڈاکو، چور، لٹیرے ٹھیک نہیں کرسکے، این پیٹرسن آپ کو اقتدار نہیں دے سکتی، حکومت میں آکر پتہ چلاکہ شہباز شریف نواز شریف سے بڑا چور نکلا۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ سعودی عرب، ایران معاملات پر پاکستان کو بہت پھونک پھونک کر قدم رکھنے کی ضرورت ہے، دھرنے کا فائدہ نواز شریف اورآصف زرداری کو ہی پہنچنا ہے، وزیراعظم عمران خان اپنے وعدے پر قائم ہیں، میں دعا لکھتا رہا اور وہ دغا پڑھتے رہے۔

ممکن ہے دھرنا ہو ہی نہیں،فیس سیونگ راستہ نکل آئے

وفاقی وزیر نے کہا کہ میں عقل مندوں کا لیڈر ہوں، بیوقوفوں کیلئے پورا ملک بھرا ہوا ہے، ابھی کوئی چیز فائنل نہیں، ہوسکتا ہے انہیں فیس سیونگ دے دی جائے، مشرف کی حکومت میں رہا ہوں، ان کے تمام رخوں سےواقف ہوتاہے، ممکن ہے دھرنا ہو ہی نہیں،فیس سیونگ راستہ نکل آئے، سیاست میں کوئی چیز آخری نہیں ہوتی، کل کے دشمن آج کے دوست یہ پاکستان کی سیاست کا حسن ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں